لاہور میں شاہراہ عام پر فائرنگ کرنے والوں کو سرکاری سرپرستی حاصل ہے،رابطہ کمیٹی -
The news is by your side.

Advertisement

لاہور میں شاہراہ عام پر فائرنگ کرنے والوں کو سرکاری سرپرستی حاصل ہے،رابطہ کمیٹی

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نےلاہورکی سڑکوں پر کھلے عام جدید وخطرناک اسلحہ کی نمائش اور شہریوں کوہراساں کرنے کے واقعات کی شدید مذمت کی ہے۔

اپنے ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا کہ بعض ٹی وی چینلز پر کئی روزسے اپنی خبروں میں یہ فلم نشرکررہے ہیں کہ لاہورمیں ایک عسکری ونگ کے مسلح افراد شہرکی سڑکوں پر جدید وخودکار ہتھیاروں سے مسلح ہوکر گھومتے ہیں، شدید فائرنگ کرتے ہیں، شہریوں کوہراساں کرتے ہیں لیکن انہیں روکنے والا کوئی نہیں ہے اسلئے کہ اس خطر ناک عسکری ونگ کو سیاسی کی سرپرستی حاصل ہے۔

رابطہ کمیٹی نے کہاکہ کراچی کواسلحہ سے پاک کرنے کے اعلانات کرنے والوں، کراچی میں اسلحہ کی تلاشی کے نام پر گھرگھرچھاپے مارنے والوں، مکانوں، دفتروں، پارکوں ، میدانوں اورعلاقوں کوکھودنے والی پولیس اوررینجرز کو لاہور میں جدید وخودکاراسلحہ لیکرگھومنے والے اورشہریوں کودہشت گردی کا نشانہ بنانے والے یہ مسلح لشکر، یہ عسکری ونگ کیوں نظرنہیں آتے؟ کراچی کی طرح لاہوراورپورے ملک کواسلحہ سے پاک کرنے کی بات کیوں نہیں کی جاتی ؟ کرمنلائزیشن پالیسی کے تحت کراچی میں عسکری ونگ کا الزام لگانے والوں کولاہورمیں یہ عسکری ونگ کیوں نظرنہیں آتے؟آخرلاہورکیلئے نیشنل ایکشن پلان پرعمل درآمدکی بات کیوں نہیں کی جاتی ؟ کیا لاہورکے یہ مسلح لشکر ہرقسم کے قانون سے آزاد ہیں؟ یا اسلئے کہ انہیں سیاسی سرپرستی حاصل ہے۔

رابطہ کمیٹی نے مزید کہا کہ اگرایک ہی ملک کے جغرافیہ میں قانون کا اطلاق ملک کے باقی حصوں میں ہوگااورملک کاایک شہریاایک خطہ قانون سے بالاترسمجھاجائے گااور قانون کایہ دوہرامعیاررہے گا تو اس سے ملک کے باقی حصوں کے عوام میں امتیازی سلوک کااحساس مزیدشدت اختیارکرے گا جو پہلے ہی بہت بڑھ چکا ہے۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں