الیکشن 2018: ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے لیے ایم کیو ایم کی درخواست دائر -
The news is by your side.

Advertisement

الیکشن 2018: ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے لیے ایم کیو ایم کی درخواست دائر

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان نے شہر کے مختلف حلقوں میں ڈالے جانے والے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے لیے صوبائی الیکشن کمیشن میں درخواست جمع کرادی۔

ایم کیو ایم کی جانب سے دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ ’ووٹوں کی گنتی کے وقت پولنگ ایجنٹس کو باہر نکالنے پر شدید تحفظات ہیں، انتخابات میں ہونے والی الیکشن کمیشن کے ضوابط کی خلاف ورزی پر تشویش ہے‘۔

متحدہ پاکستان نے درخواست میں استدعا کی ہے کہ کراچی کے  مختلف قومی و صوبائی اسمبلی کے حلقوں کی دوبارہ گنتی کی جائے اور جب تک ہمارے مطالبات پورے نہیں ہوتے انتخابی نتائج روکے جائیں۔

مزید پڑھیں: کراچی میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی سے ہم سندھ اسمبلی کی 3 نشستیں جیت جائیں گے: علی رضاعابدی

واضح رہے کہ 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں تحریک انصاف نے قومی اسمبلی کی 272 نشتوں میں سے 115 اپنے نام کیں، کراچی سے پی ٹی آئی 12 نشستیں حاصل کرنے کے بعد شہر کی سب سے بڑی جماعت بن گئی۔

پولنگ کے روز جب گنتی کا عمل شروع ہوا تھا تو ایم کیو ایم، پیپلزپارٹی، مسلم لیگ ن، متحدہ مجلس عمل سمیت دیگر آزاد امیدواروں نے اعتراض اٹھایا تھا کہ ان کے پولنگ ایجنٹس کو گنتی کے وقت باہر نکال دیا گیا اور نتائج فارم 45 کے بجائے سادہ کاغذ پر دیے گئے تھے۔

صوبائی الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں اور آزاد امیدوار کی جانب سے عائد ہونے والے الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ گنتی کے وقت تمام امیدواروں کے پولنگ ایجنٹس موجود تھے اور فارم 45 بھی جلد جاری کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: ایم کیو ایم کا وزارت عظمیٰ کے لئے عمران خان کی حمایت کا اعلان

خیال رہے کہ ایم کیو ایم نے گزشتہ روز وفاق میں تحریک انصاف کی حمایت اعلان کیا اور انتخابات میں ہونے والی دھاندلی کے خلاف آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت سے معذرت کی تھی، دلچسپ امر یہ ہے کہ جن حلقوں پر متحدہ دوبارہ گنتی کروانے کا مطالبہ کررہی ہے وہاں سے پی ٹی آئی کے امیدوار کامیاب ہوئے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں