The news is by your side.

Advertisement

سندھو دیش کے خواب خاک ہوجائیں گے، خالد مقبول صدیقی

حیدرآباد: ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی کا کہنا ہے کہ ہم پاکستان کی اصل جدوجہد کے لیے کھڑے ہیں، سندھو دیش کے خواب خاک ہوجائیں گے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ایم کیو ایم کو کھونے نہیں دیا اکٹھا کھڑا کردیا، پاکستان کے خالقوں کی اولاد ہیں، غداری کرہی نہیں سکتے، جو وفاداری ہم نے ملک سے دکھائی کوئی سیاست جماعت نہیں دکھا سکتی۔

انہوں نے کہا کہ مہاجروں کی آواز بلند ہوچکی، کوئی بٹھائے بھی تو نہ بیٹھے گی، آباؤ اجداد نے پاکستان بنایا ہم بچانے نکلے ہیں، یہ بیمار بوسیدہ نظام بچے گا نہ اس کی حفاظت کرنے والی حکومت بچے گی، اب تیرکمان سے نکل چکا، جب ہم نکلتے ہیں تو تقدیر بدل جاتی ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ اب فیصلے کا وقت آچکا، جاگیردار، وڈیرے حکمران نہیں بچیں گے، ایم کیو ایم سے جو جہاں گیا واپس آجائے، دل و دماغ آپ کے لیے کھلے ہیں، واپس آجائیں اس سے پہلے حقدار ہونے کے لیے حق پرست شرط بن جائے۔

پیپلزپارٹی نے پاکستان کو دولخت کیا، عامر خان

ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر ڈپٹی کنوینر عامر خان نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے پاکستان کو دولخت کیا، پیپلزپارٹی سندھو دیش کے لیے کام کررہی ہے، تمہارے حلق سے صوبہ نکال کر رہیں گے۔

عامر خان نے کہا کہ حیدرآباد کے لوگوں کو ایم کیو ایم کا ساتھ چھوڑنے کے لیے ڈرایا دھمکایا گیا، حیدرآباد میں ہمارے لوگوں کی 250 لاشیں گرادی گئیں، دھمکیاں دی گئیں لاشیں گرجائیں گی حیدرآباد یونیورسٹی نہیں بنے گی۔

انہوں نے کہا کہ سندھ کے عوام کو وڈیروں، جاگیرداروں نے غلام بنا رکھا ہے، پیپلزپارٹی حکومت کو کرپشن کے بغیر کھانا ہضم نہیں ہوتا، ان کے ہوتے ہوئے سندھ ترقی نہیں کرسکتا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما نے کہا کہ پیپلزپارٹی کو ایک مہاجر ملا جسے ایڈمنسٹریٹر لگایا ہو؟ ایم کیو ایم متحد رہے گی آنے والا الیکشن بتائے گا، ایسا کرارا جواب دیں گے تمہارا الیکشن میں کھڑا ہونا بھی محال ہوجائے گا۔

پیپلزپارٹی پر بھروسہ نہیں، حقوق نہ ملے تو دھرنا دیں گے، خواجہ اظہار

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ پیپلزپارٹی پہلے دن سے پی ٹی آئی کو آڑے ہاتھوں لے رہی ہے، پی پی کہتی ہے یہ تو صوبہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں،پی پی پر بھروسہ نہیں، حقوق نہ ملے تو دھرنے دیں گے۔

خواجہ اظہار نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے روش نہ بدلی تو پورا شہری سندھ وزیراعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ کرسکتا ہے، ہمارے آٹھ سال میں جو ترقیاتی کام ہوا پاکستان کی تاریخ میں ایسا کام نہیں ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں