The news is by your side.

Advertisement

مفتی کفایت اللہ اور ان کے بیٹوں پر حملہ

مانسہرہ: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مرکزی رہنما مفتی کفایت اللہ اور ان کے بیٹوں پر حملہ ہوا جس کے باعث گاڑی میں سوار تمام افراد زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق مفتی کفایت اسلام آباد سے مانسہرہ آرہے تھے کہ اچانک بیدرہ انٹرچینج پر عقب سے آنے والی گاڑی نے جان بوجھ کر مفتی کی گاڑی کو ٹکر ماری اور روکنے پر مجبور کردیا۔

بعد ازاں نامعلوم افراد نے گاڑی سے اتر کر مفتی کفایت اللہ اور ان کے بیٹوں کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔

مفتی کفایت اللہ کو رہا کرنے کا حکم

بھائی حبیب الرحمان نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ تشدد سے مفتی کفایت اللہ، گاڑی میں سوار 2 بیٹے اور ایک ساتھی بھی زخمی ہوا، مفتی کفایت اسلام آباد سے مانسہرہ آرہے تھے، انتظامیہ نے تحقیقات کا آغاز کردیا۔

مفتی کفایت اللہ پر حملے کا مقدمہ 5 نامعلوم افراد کے خلاف درج کرلیا گیا ہے۔

جبکہ ذرائع کا کہنا ہے کہ حملے میں مفتی کفایت اللّٰه کے ہاتھ میں فریکچر ہوا ہے، تمام زخمیوں کو مقامی اسپتال منتقل کردیا گیا، جبکہ پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے، جلد گرفتاری کے امکانات ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں