عقیدت کامعاشی پہلو، ماہ محرم میں 126ارب روپے کے اخراجات -
The news is by your side.

Advertisement

عقیدت کامعاشی پہلو، ماہ محرم میں 126ارب روپے کے اخراجات

کراچی : محرم الحرام میں شہدائے کربلا کو یاد کرنے کے مختلف انداز ہیں ۔ تعزیے نکالنا۔نیاز کرنا ۔ حلیم بنانا ۔۔ پاکستان میں ان سب پر ایک سو چھبیس ارب روپے کی لین دین ہوتی ہے,۔

عشرہ محرم میں کربلا کے ریگزار پر خانوادہ رسول نےقُربانی دے کر اسلام کو جلا بخشی ۔ یہی وجہ ہے کہ آج اُنہیں مختلف طریقوں سے یاد کیا جاتا ہے, لیکن اس عقیدت و محبت کامعاشی پہلو بھی ہے۔

تعزیہ سازی کی صنعت پاکستان میں چھوٹے بڑے دولاکھ تعزیےتیارکرتی ہے۔ایک اندازے کے مطابق اس محبت کو نچھاور کرنے میں ایک ارب سے زائد رقم صرف ہوتی ہےْ

دس دنوں کے دوران نذر و نیاز اور شربت کی تیاری پر تقریباًساڑھے پانچ ارب روپےخرچ کئے جاتے ہیں۔ حلیم کی دیگیں بنائی جاتی ہیں جس پرمجموعی طورپردس ارب روپے تک کی لاگت آتی ہے۔

چالیس لاکھ خاندان ایسےہیں جو ایک مجلس کااہتمام ضرور کرتے ہیں۔ مجالس پرکیاجانےوالاخرچہ سوارب روپےبنتاہے۔ امام بارگاہوں کی تزئین کےاخراجات کامحتاط تخمتنہ دس ارب روپےلگایاجائے تومحرم کےدوران ایک سو چھبیس ارب روپے کا لین دین ہوتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں