The news is by your side.

Advertisement

فاٹا کو سی پیک کا حصہ بنایا جائے: مولانا فضل الرحمان

پشاور: سربراہ جمعیت علمائے اسلام مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اپنی حیثیت میں چیف جسٹس سے ملاقات کی، جب بڑے ملتے ہیں تو مثبت نتیجہ آتا ہے.

ان خیالات کا اظہار انھوں‌ نے پشاور میں‌ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا. ان کا کہنا تھا کہ امید ہے کہ اس ملاقات کا نتیجہ مثبت نکلے گا.

پریس کانفرنس میں مولانا فضل الرحمان نے وفاقی سطح پرایپکس کمیٹی کا اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا، ان کا کہنا تھا کہ اجلاس بلا کر فاٹا میں‌ قیام امن پر موثر حکمت عملی وضع کی جائے اور اس کا ملکی سطح پر اعلان کیا جائے.

ان کا کہنا تھا کہ سی پیک میں بھی فاٹا کو حصہ دیا جائے، فاٹا کا سالانہ مالیاتی پیکیج حکومت فوری مہیا کرے، فاٹا میں تعلیمی ادارے اور مدارس سب بند ہیں.

پریس کانفرنس میں‌ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ فاٹا سپریم کونسل نے لاپتا افراد کی بازیابی پرزوردیا، یہ ایک اہم مسئلہ ہے.

مولانا فضل الرحمان نے نوبیل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی کے دورہ پاکستان پر تبصرے کرتے ہوئے کہا کہ ملالہ پاکستان کی بیٹی ہے، وطن آئی ہے، اچھی بات ہے.

یاد رہے کہ گذشتہ دونوں‌ کراچی میں‌ ہونے والے ایک اجلاس میں‌ مذہبی جماعتوں کے اتحاد متحدہ مجلس عمل کو بحال کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کو اس کا سربراہ منتخب کیا گیا تھا. یہ اتحاد اگلے انتخابی معرکے میں حصہ لے گا.


ملک میں اسلامی انقلاب کیلئے نئے سفرکا آغاز کریں گے، مولانا فضل الرحمان


 کراچی معاشی شہ رگ ہے، کسی کو یہ شہ رگ کاٹنے نہیں دیں گے: مولانا فضل الرحمان

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں