The news is by your side.

Advertisement

ملتان : کھلے مضر صحت دودھ کی سرعام فروخت جاری، امراض پھیلنے لگے

ملتان : مضرصحت کھلے دودھ کی فروخت سے شہری بیماریوں میں مبتلا ہوگئے، ملتان میں کیمیکل ملے کھلے دودھ کی سرعام فروخت جاری ہے جس کے سبب اسپتالوں میں اسہال اور ہیضے کے مریضوں میں اضافہ ہورہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ملتان کے مختلف علاقوں میں مضرصحت دودھ کی فروخت سے شہری پریشان ہیں، شہر مختلف علاقوں میں کیمیکل ملا کھلا دودھ سرعام فروخت کیا جا رہا ہے جبکہ دودھ سیل پوائنٹس پر صفائی کے انتظامات بھی ناقص ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ نوے سے سو والے کلو دودھ کا میعار کچھ بہتر ہے جبکہ کھلے دودھ کے استعمال سے بچوں کو اسہال اور ہیضہ جیسے امراض کا سامنا کرنا رہتا ہے۔

دودھ فروشوں کے مطابق ناجائز منافع خور کیمکل ملا کھلا دودھ بیچ کر لوگوں کی زندگیوں سے کھیل رہے ہیں ان کے خلاف سخت کاروائی ہونی چاہیئے۔

ایک رپورٹ کے مطابق شہر میں خالص دوددھ نوے روپے سے ایک سو دس روپے میں جبکہ مضر صحت کیمیکل ملا دودھ ستر روپے کلو فروخت ہو رہا ہے مضر صحت دودھ کی فروخت متعلقہ اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ متعلقہ اداروں کو خالص اور صحت بخش دوددھ کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیئے سخت اقدامات کرنے ہوں گے تاکہ شہریوں کو مہک امراض سے بچایا جاسکے۔

گندے ماحول میں دودھ کی سپلائی، مضر صحت دودھ بنانے اور فروخت کرنے والے مافیا کے خلاف فوری طور پر مؤثر اور فیصلہ کن کارروائی نہ کی گئی تو آنے والے دنوں میں مختلف امراض کے شکار شہریوں کی تعداد میں خوفناک حد تک اضافہ ہوسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں