پیپلزپارٹی وفاق میں بھی حکومت بنائے گی: مرادعلی شاہ -
The news is by your side.

Advertisement

پیپلزپارٹی وفاق میں بھی حکومت بنائے گی: مرادعلی شاہ

کراچی: سندھ اسمبلی میں دھواں دار اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے دعویٰ کیا ہے کہ پیپلز پارٹی وفاق میں بھی حکومت بنائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ سندھ کے عوام نے سابق صدر آصف زرداری اور پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کی قیادت پر بھروسا کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس بار سندھ میں پہلے سے زیادہ ووٹ اور نشستیں لے کر پیپلز پارٹی کامیاب ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ پلان بنا کر آئے تھے لیکن ایک نشست بھی نہ لے سکے، کچھ دن انتظار کرر ہا ہوں ان لوگوں کی سازشیں کھل جائیں گی۔ انہوں نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ پیپلز پارٹی ایک بار پھر وفاق میں حکومت بنائے گی۔ مراد علی شاہ نے یہ بھی کہا کہ سندھ حکومت نے تھر کول منصوبہ اپنی مدد آپ کے تحت بنایا ہے۔

وفاق کے ساتھ پانی کی تقسیم کے معاملے پر ان کا کہنا تھا کہ سکھربیراج جب بناتوسندھ اور پنجاب کے درمیان بھی معاہدے ہوئے تھے ، جنہیں سب نے منظور کیا تھا۔ واٹر اکارڈ میں کراچی کا الگ ذکر ہے ۔

وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ اس دفعہ سی سی آئی عجیب بنی ہے،سی سی آئی میں جو سندھ کے ممبر تھے انہوں نے مخالفت کی،جن3نمائندوں نےسندھ کےپانی کی بات نہ کی وہ وفاقی نمائندےہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ انگریز دور میں دریائے سندھ پر ڈیم اورکینال بنے، دریاؤں کوروکا گیا تو سندھ میں پانی آنا کم ہوگیا۔ سنہ  1948میں بھارت نے پاکستان کا پانی بندکردیاتھا۔

سندھ طاس معاہدے میں 3دریا بھارت کودیے،1991میں حصے دوبارہ مختص کیے۔بدقسمتی سے گریٹرتھل کینال بنایاگیا، وفاقی حکومت ناانصافیاں کرتی جارہی ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ وفا ق اورارساسندھ سے پانی کے معاملے پر زیادتی کررہےہیں۔وفاقی وزیر نے کہا کراچی کےپانی کامعاملہ آبی کونسل کوبھیج دو۔ سکھراورگڈو بیراج میں پانی نہیں ملے گا بلوچستان کوکیسے دیں گے، پانی کے معاملے بلوچستان نے سندھ کا ساتھ دیا۔

وزیراعلیٰ سندھ کا یہ بھی کہنا تھا کہ کبھی کبھارکےسیلاب سےنمٹنےکےلیےبہت بڑاڈیم چاہیےاور بڑاڈیم بنانےکےلیےوسائل نہیں ہیں۔چھوٹےڈیم بننےکےبعدبھی سیلاب سےنقصانات ہوں گے۔ارسا کاپانی تقسیم کرنے کا نظام درست نہیں، ہمیں فصل کےلیےپانی چاہیے ہوتا ہے تو منگلا ڈیم بھر رہے ہوتے ہیں۔اصول یہ ہےجب پانی کی ضرورت ہوڈیم میں نہیں بھراجاتا۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت سیلاب میں پانی چھوڑتاہے،مشرقی نہروں میں بھی ویسےہی پانی چھوڑاجارہاہے،سندھ کی بددعا جسے لگی وہ سب کو پتا ہے،یہ ہر بارشکست کھائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں