The news is by your side.

Advertisement

سابق بے شرم رہنماؤں نے ہمارا سر جھکایا ہوا تھا: مراد سعید

اسلام آباد: وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید کا کہنا ہے کہ امریکیوں کو پتہ تھا ہمارے حکمرانوں نے منی لانڈرنگ کر کے جائیدادیں خریدیں، جندال کے آنے پر ہم نے سوال کیا تو کہا ذاتی تعلقات ہیں، بے شرم رہنماؤں نے ہمارا سر جھکایا ہوا تھا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے اندر چوروں کی مجلس ہو رہی ہے، مجلس میں کوئی ابو بچاؤ مہم سامنے لائے گا تو کوئی اپنی کرپشن بچائے گا۔ وزیر اعظم کے امریکا دورے کے بعد اس پر بحث کی جانی چاہیئے تھی۔

مراد سعید نے کہا کہ مسلمانوں پر ظلم کے پہاڑ توڑنے کے باوجود ان پر دہشت گردی کا الزام لگتا تھا، پاکستان میں دہشت گردی جنگ میں شہدا کی تعداد 70 ہزار سے زائد ہے، اس کے باوجود دنیا پاکستان پر الزام لگاتی ہے۔ پہلے دنیا معاشی بدحالی اور کرپشن پر آپ کو اچھی نظر سے نہیں دیکھتی تھی۔

انہوں نے کہا کہ پرچی والا چیئرمین کہتا ہے بارش آتی ہے تو پانی آتا ہے، کل کہا آنکھیں نکالوں گا، سابق وزیر اعظم نواز شریف پرچی لے کر تقریر کرتے تھے۔ آصف زرداری سی آئی اے کے ساتھ سودا کرتے تھے، یوسف رضا گیلانی کہتے تھے ڈرون حملے کیے جائیں۔

مراد سعید کا کہنا تھا کہ امریکیوں کو پتہ تھا انہوں نے منی لانڈرنگ کر کے جائیدادیں خریدیں، بلاول کی والدہ سے گفتگو بھی سی آئی اے نے سنی۔ مولانا نے کشمیر کمیٹی کے چیئرمین رہ کر بس لسی پی، کھانا کھایا، بنگلے میں رہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے 74 سال بعد کشمیر کا بیانیہ دنیا تک پہنچایا، آج بین الاقوامی میڈیا بھی کشمیریوں کو رپورٹ کر رہا ہے۔ خواجہ آصف نے کہا تھا پاکستان میں لشکر طیبہ اور پناہ گاہیں ہیں، ان کی حکومت میں ہمیشہ امریکا کی خوشنودی حاصل کرنے کی کوشش کی گئی۔

مراد سعید نے کہا کہ اپنی نواسی کی شادی میں مودی کو بلا کر کشمیریوں پر ظلم و ستم کو بھلا دیا گیا، جندال جب پاکستان آیا تھا ہم نے سوال کیا تھا تو کہا ذاتی تعلقات ہیں۔ ہم سر اٹھا کر جیت سکتے تھے ان بے شرم رہنماؤں نے سر جھکایا ہوا تھا۔

انہوں نے کہا کہ صادق لیڈر ملا تو ہزاروں پاکستانیوں نے باہر استقبال کیا، قید پاکستانیوں کو چھڑانے کے لیے عمران خان سعودی عرب گئے۔ پاکستانیوں کو گھر لانے کے لیے عمران خان نے ملیشیا طیارہ بھیجا، آج پاکستانی سر فخر سے اٹھا کر زندگی گزار رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں