The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں راشن کو کسی کو نہیں ملا، بھاشن ضرور ملتا ہے، مراد سعید کا ردعمل

اسلام آباد: وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت نے راشن کا وعدہ کیا جو کسی کے گھر پر نہیں پہنچا، راشن کسی کو نہیں ملتا لیکن بھاشن ضرور ملتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے بلاول بھٹو کی نیوز کانفرنس پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ سندھ میں راشن گھر نہ پہنچنے پر لوگ سڑکوں پر آئے جس سے وبا کا خطرہ بڑھا، سندھ حکومت بتائے راشن کا پیسہ کہاں چلا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پچھلے 8 سالوں میں سندھ حکومت کو ساڑھے 5 کھرب روپے صحت کے لیے ملے، اب تک ایسا اسپتال نہیں بنا جس میں آصف زرداری کا علاج ہوسکے۔

مراد سعید نے کہا کہ لاڑکانہ میں کتوں کے کاٹنے کی ویکسین دستیاب نہیں ہوتی، کیا کراچی میں ڈاکٹر فرقان کو دینے کے لیے ایک وینٹی لیٹر تک نہیں تھا، سندھ میں اسپتالوں کی انچارج خاتون خود اپنے علاج کے لیے نجی اسپتال گئیں۔

مزید پڑھیں:  پاکستان میں کرونا زبردستی پھیلایا گیا، بلاول بھٹو زرداری کا الزام

وفاقی وزیر نے کہا کہ عالمی وبا میں بھی آپ کو کرپشن کی پڑی ہے، ڈاکٹر عاصم اور دیگر کے اسپتالوں کو ایڈوانس رقم دی جارہی ہیں، وزیراعلیٰ مراد علی شاہ آصف علی زرداری کے سہولت کار بنے ہوئے ہیں۔

جعلی اکاؤنٹس پر گفتگو کرتے ہوئے مراد سعید کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی رپورٹس پڑھیں، سارا پیسہ زرداری کے اکاؤنٹ میں گیا، جعلی اکاؤنٹس میں پیسہ آرہا ہے، فرزند زرداری کے خرچے چل رہے ہیں، جعلی اکاؤنٹس میں مزید پیسہ ڈالنے کے لیے وزیر اعلیٰ سندھ بیٹھے ہیں۔

مراد سعید نے کہا کہ وزیراعظم کا پہلے دن سے موقف ہے کرونا کے ساتھ لوگوں کو بھوک سے بھی بچانا ہے، جن کی نوکریاں گئیں وفاقی حکومت نے ان کو 12 ہزار فی خاندان دیا، وفاقی حکومت صوبوں کو 250 وینٹی لیٹرز دے چکی ہے، حکومتی اقدامات کی وجہ سے یومیہ ٹیسٹنگ استعداد 30 ہزار تک پہنچ گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں