The news is by your side.

Advertisement

مرید عباس قتل کیس : دہشت گردی کی دفعات شامل کرنے پر وکیل صفائی کے دلائل طلب

کراچی : اینکرمرید عباس قتل کیس میں عدالت نے مقدمے میں دہشتگردی کی دفعات شامل کرنے پر وکیل صفائی سے موقف طلب کرلیا۔ فاضل جج نے کہا کہ کیس اے ٹی سی منتقل کرنے کا فیصلہ وکیل صفائی کو سن کر کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق ٹی وی اینکر مرید عباس سمیت دو افراد کے قتل کے کیس کی سماعت کراچی سٹی کورٹ میں ہوئی۔ فاضل جج نے مقدمےمیں دہشتگردی کی دفعات شامل کرنے پر وکیل صفائی کے دلائل طلب کرلیے۔

اس موقع پر عدالت نے ریمارکس دئیے کہ وکیل صفائی کا مؤقف سننے کے بعد کیس انسداد دہشت گردی عدالت منتقل کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔ ہائی پروفائل کیس ہے چاہتے ہیں غلطی کی گنجائش نہ رہے اور انصاف کے تقاضے پورے کیے جائیں۔

دوران سماعت عدالت نے تفتیشی افسر سے پوچھا کہ کیس میں دہشت گردی کی دفعات کن وجوہات پر شامل کی گئیں، تو آئی او نے جواب دیا کہ ملزم نے شہر کے پوش علاقے میں دو افراد قتل کئے، جس سے معاشرے میں خوف وہراس پھیلا۔

ملزم عاطف زمان پستول لہراتا رہا۔ تفتیشی افسر نے مقدمے کا مکمل ریکارڈ بھی عدالت میں پیش کیا اور بتایا کہ تمام اکائنٹس جن میں پیسہ جمع ہوتا تھا وہ ملزم عاطف زمان کے ہی تھے۔

پولیس نے فنانشل کرائم کی چھان بین نہیں کی۔ عدالت نے تفتیشی افسر کو سننے کے بعد وکلاء صفائی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں