site
stats
سندھ

پولیس مقابلہ: پی پی رہنما کا بیٹا بازیاب، 5 اغواء کارہلاک

کراچی : ملیر پولیس نے مقابلے کے بعد پانچ اغواء کاروں کو ہلاک کرکے پیپلز پارٹی کے ایم پی اے کا بیٹا بازیاب کرالیا، مغوی کو ایک روز قبل ہی گڈاپ سے اغواء کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق ناردرن بائی پاس پر پولیس نے مقابلہ کے بعد  5 اغواء کار ہلاک کردیئے ہیں ،ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کا کہنا ہے کہ ہلاک شدگان کے قبضے سے پیپلزپارٹی کے رکن سندھ اسمبلی کا بیٹا بازیاب کرا لیا گیا ہے۔

ایس ایس پی راؤ انوار کے مطابق رکن سندھ اسمبلی مرتضیٰ بلوچ کا بیٹا حیات بلوچ گزشتہ روز گڈاپ کے راستے حب جارہا تھا کہ اغواء کار اس کو گاڑی سے اتار کر اپنے ہمراہ لے گئے۔


مزید پڑھیں: وزیراعلیٰ سندھ کےمعاون خصوصی کا بیٹا گڈاپ سےاغوا


راؤ انوار نے کہا ہے کہ خفیہ اطلاع پر ناردرن بائی پاس کے قریب علاقے میں کامیاب کارروائی کر کے پانچ ملزمان کو ہلاک کرنے کے بعد مغوی حیات بلوچ کو بحفاظت بازیاب کروا لیا گیا ہے، ایس ایس پی راؤ انوار کے مطابق جائے وقوعہ سے دو خواتین کو بھی گرفتار کیا گیا ہے، مزید تفتیش جاری ہے۔

علاوہ ازیں کراچی پولیس چیف غلام قادرتھیبو نے مقابلے میں حصہ لینے والے ایس ایس پی راؤ انوار اور پولیس پارٹی کیلئے ایک لاکھ روپے انعام کا اعلان کیا ہے، انہوں نے کہا کہ راؤ انوار نے کامیاب کارروائی کر کے دو روز میں پی پی ایم پی اے کے بیٹے کو بازیاب کرایا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top