The news is by your side.

Advertisement

ساہیوال واقعہ: سندھ حکومت کا نئے پولیس قوانین بنانے کا فیصلہ

کراچی: سندھ حکومت کے مشیر اطلاعات مرتضیٰ وہاب کا کہنا ہے کہ انہوں نے کہا کہ ہمارا نیا پولیس ایکٹ چیک اینڈ بیلنس کے ساتھ ہوگا۔ سندھ حکومت چیک اینڈ بیلنس پر قانون سازی کرے گی، پولیس کا احتساب ہونا چاہیئے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت کے مشیر اطلاعات مرتضیٰ وہاب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سندھ اپنا قانون بنائے گا۔ کچھ ایم پی ایز معاملات کو 3 دن کے اندر سندھ اسمبلی میں پیش کریں گے، یہ قانون قیدیوں کی بہتری کے لیے کارآمد ہوگا۔

مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ یہ پہلا صوبہ ہے جو اہم معاملے پر قانون سازی کرنے جا رہا ہے، جعلی مبر پلیٹس کی روک تھام کے لیے وزیر اعلیٰ سندھ نے بات کی۔ ساہیوال واقعے پر میرے پاس الفاظ نہیں، واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا نیا پولیس ایکٹ چیک اینڈ بیلنس کے ساتھ ہوگا۔ سندھ حکومت چیک اینڈ بیلنس پر قانون سازی کرے گی، پولیس کا احتساب ہونا چاہیئے۔ قانون سازی کے بعد ہم سپریم کورٹ سے رجوع کریں گے۔ کسی ادارے کو احتساب سے بالاتر نہیں ہونا چاہیئے۔

مشیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف ذمہ داروں کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کرے، ہمارے ملک کی عدلیہ آزاد ہے۔ جیلوں کی بہتری کے لیے اقدامات کر رہے ہیں۔ پیپلز پارٹی نے اپنے منشور میں پولیس اور جیل کے لیے قانون سازی کا وعدہ کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک بجلی کی کمی پر جواب دے گی، نوری آباد پلانٹ سے 100 میگا واٹ اضافی بجلی کراچی کو دی گئی۔ کراچی میں بجلی کے بحران میں کمی آئی ہے۔

مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کی پرانی گاڑیوں کو نیلام کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جیلوں میں اصلاحات کے لیے قانون پر کابینہ کو بریفنگ دی گئی، جیل اور پولیس کے حوالے سے نئے قوانین بنائے جا رہے ہیں۔ ’عمارتوں کی ملکیت سے متعلق سپریم کورٹ جا رہے ہیں‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں