The news is by your side.

Advertisement

شارٹس پہن کر سعودی خاتون کے سامنے آنے والا جم ورکر ملک بدر

ریاض: فٹنس کلب میں خواتین کے لیے مختص جگہ پر نامناسب لباس کے ساتھ داخل ہونے والے غیر ملکی جم ورکر کو ملک بدر کردیا گیا۔

عرب میڈیا کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک تصویر پر سعودی حکام نے نوٹس لیتے ہوئے ناصرف غیر ملکی کو مملکت سے باہر نکال دیا بلکہ مذکورہ کلب کو عارضی طور پر بند کردیا گیا ہے۔

سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر پر شیئر کی جانے والی تصویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ غیر ملکی جم ورکر شارٹس پہنے خواتین کے لیے مختص جگہ میں داخل ہوگیا جبکہ اس کے عقب میں ایک خاتون برقع میں موجود ہیں۔

ایک خاتون نے اس سارے منظر کو کیمرے میں محفوظ کرلیا اور بعدازاں سوشل میڈیا کے ذریعے حکام کی توجہ اس جانب مبذول کرائی، سعودی وزارت لیبر اینڈ سوشل ڈیولپمنٹ نے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کے بعد غیر ملکی شخص کو ملک بدر کردیا جبکہ فٹنس جم کو عارضی طور پر بند کردیا گیا ہے۔

میڈیا کے مطابق واقعہ سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں خواتین کے فٹنس کلب میں پیش آیا۔

ریاض میں واقعہ فٹنس کلب میں متعدد خواتین ایکسرسائز کرنے کے لیے موجود ہوتی ہیں، ان کی موجودگی میں نوجوان کو کمرے میں داخل ہوتا دیکھ کر خواتین حیران رہ گئی تھیں۔

واضح رہے کہ اپریل 2018 میں بھی ریاض میں واقعہ ایک فٹنس کلب کے افتتاح کے دوران خواتین کے نامناسب لباس پہننے کی وجہ سے بند کردیا گیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں