The news is by your side.

Advertisement

پرویز مشرف کےخلاف سنگین غداری کیس، رضا بشیر وکیل دفاع مقرر

اسلام آباد : سابق صدر پرویز مشرف کےخلاف سنگین غداری کیس میں رضا بشیر کو وکیل دفاع مقرر کردیا، دور ان سماعت وزارت قانون نے 14 ناموں پر  مشتمل وکلاءپینل عدالت میں جمع کروا یا تھا۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدر پرویز مشرف سنگین غداری کیس کی سماعت جسٹس طاہرہ صفدر کی سربراہی میں تین رکنی خصوصی عدالت نے کی، دور ان سماعت وزارت قانون نے 14 ناموں پر مشتمل وکلاءپینل عدالت میں جمع کروا دیا ۔

عدالت نے مشرف کے دفاع کیلئے وکلاءکی فہرست مانگی تھی، جسٹس طاہرہ صفدر نے کہاکہ فہرست میں سے کسی ایک نام کا انتخاب عدالت کرےگی، جس پر سر کاری پراسیکیوٹر نے کہاکہ فہرست میں شامل کسی نام پر اعتراض نہیں، ملزم کیلئے وکیل مقرر کرنا عدالت کی صوابدید ہے۔

بعد ازاں پرویز مشرف سنگین غداری کیس کی سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا، جس میں کہاگیاکہ رضابشیرکو وکیل دفاع مقرر کیا جاتاہے، حکمنا مے کے مطابق اس کا کا نوٹیفیکیشن تین دنوں میں جاری کیا جائے اور رضا بشیر کو وزارت قانون اخراجات ادا کرے گی۔

یاد رہے کہ پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے شروع کیا تھا، مارچ 2014 میں خصوصی عدالت کی جانب سے سابق صدر پر فرد جرم عائد کی گئی تھی جبکہ ستمبر میں پراسیکیوشن کی جانب سے ثبوت فراہم کیے گئے تھے تاہم اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم امتناع کے بعد خصوصی عدالت پرویز مشرف کے خلاف مزید سماعت نہیں کرسکی۔

بعدازاں 2016 میں عدالت کے حکم پر ایگزٹ کنٹرول لسٹ ( ای سی ایل ) سے نام نکالے جانے کے بعد وہ ملک سے باہر چلے گئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں