The news is by your side.

Advertisement

مقبول ترین قومی نغمے کے خالق مشیر کاظمی کی برسی

مشیر کاظمی کا شمار پاکستان کے نام وَر نغمہ نگاروں میں‌ ہوتا ہے جو 8 دسمبر 1975ء کو اس دنیا سے رخصت ہوگئے تھے۔ آج ان کا یومِ وفات ہے۔

مشیر کاظمی 1915ء میں ضلع انبالہ میں پیدا ہوئے۔ فلموں میں ان کی نغمہ نگاری کا سلسلہ ‘دوپٹہ’ سے شروع ہوا جو پاکستان کی پہلی اردو فلم تھی جس کے نغمے ملکہ ترنم نور جہاں نے گائے تھے۔

اس فلم کے تقریباً سبھی نغمات سپر ہٹ ثابت ہوئے اور مشیر کاظمی اس وقت کی فلمی صنعت کے معروف نغمہ نگاروں میں شمار ہونے لگے۔ مشیر کاظمی نے لاتعداد فلموں کے لیے نغمات تحریر کیے جن میں میرا کیا قصور، زمین، لنڈا بازار، دلاں دے سودے، ماں کے آنسو، آخری چٹان اور دل لگی سرفہرست ہیں۔

1965ء کی پاک بھارت جنگ کے دوران مشیر کاظمی کا نغمہ ‘اے راہ حق کے شہیدو، وفا کی تصویرو’ بے حد مقبول ہوا۔

لاہور میں وفات پانے والے مشیر کاظمی کو مومن پورہ کے قبرستان میں سپردِ خاک کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں