site
stats
صحت

موسیقی لوگوں کے درمیان فاصلے مٹانے میں معاون

نیویارک: ماہرین کے مطابق کسی جگہ پر اگر لوگوں کے موڈ کی مناسبت سے موسیقی چلائی جائے تو ان میں اپنے ساتھیوں سے گھلنے ملنے اور ان کی مدد کرنے کا جذبہ پیدا ہوتا ہے۔

اس سے قبل میوزک کو دماغی رجحانات اور وقتی طور پر جذبات پیدا کرنے کے لیے بھی استعمال کیا جاتا رہا ہے۔ مغربی ممالک میں کئی شاپنگ سینٹرز میں ایسی موسیقی بجائی جاتی ہے جس سے گاہک زیادہ خریداری کرسکیں۔ تخلیق کار ادب، شاعری یا فن تخلیق کرتے ہوئے بھی موسیقی سننا پسند کرتے ہیں۔

music-2

تاہم ایک نئی تحقیق کے مطابق مختلف اداروں میں موزوں موسیقی وہاں کام کرنے والے افراد کو ایک دوسرے کے قریب لانے اور ایک دوسرے کی مدد کرنے پر مائل کرتی ہے۔

اس تحقیق کے لیے ایک تجربہ کیا گیا جس میں ایک آفس کے ایک حصہ میں دھیمی آواز میں ہیجان انگیز اور دوسرے حصہ میں اداس شاعری و موسیقی والا گانا چلایا گیا۔

پہلے حصہ میں جہاں ہیجان انگیز موسیقی اور شوخ و شنگ بولوں والا گانا چل رہا تھا وہاں لوگوں نے ایک دوسرے سے مسکراہٹوں کا تبادلہ کیا اور آپس میں ایک دوسرے سے بات بھی کی۔

دوسرے حصہ کے لوگ گانے کے دوران خاموش رہے اور ایک دوسرے سے ضرورت کے تحت انتہائی مختصر بات چیت کی۔

music-3

ماہرین کے مطابق دراصل موسیقی نے ملازمین کے موڈ پر اثر کیا۔ تیز گانوں نے ان کے موڈ کو بہتر کیا اور وہ سوشل ہو کر آپس میں گھل مل گئے جبکہ اداس گانے سننے والے افراد میں یکدم اداسی اور مایوسی کا رجحان ابھر آیا اور انہوں نے کسی دوسرے شخص کی مدد کرنے یا اس سے بات کرنے سے گریز کیا۔

ماہرین نے واضح کیا کہ صرف موسیقی ہی نہیں بلکہ ہمارے ماحول میں ہر چیز جیسے دیواروں کا رنگ، وہاں کی سجاوٹ، وہاں موجود خوشبو، اور وہاں کی روشنیاں وغیرہ ہمارے موڈ پر اثر انداز ہوتی ہیں اور ہم اس لحاظ سے منفی یا مثبت تاثرات کا اظہار کرتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top