The news is by your side.

Advertisement

انشاء اللہ ! علی نور کو جگر کے ٹرانسپلانٹ کی‌ضرورت نہیں پڑے گی

معروف گلوکار علی نور سے متعلق جگر کے عطیے کی اپیل گزشتہ روز سے سوشل میڈیا پر گردش کررہی ہے لیکن پاکستانی قوانین کے تحت ایسا ممکن نہیں ہے، اہل خانہ پر امید ہیں کہ اس ٹرانسپلانٹ کی ضرورت پیش نہیں آئے گی۔

گزشتہ روز علی نور کے آفیشل انسٹا گرام اکاؤنٹ اور نوری بینڈ کے آفیشل پیج سے اپیل کی گئی تھی کہ علی نور کو جگر کے ٹرانسپلانٹ کے لیے ڈونر درکا ر ہے ، اس اپیل کے بعد سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہوگیا تھا۔

پوسٹ میں کہا گیا تھا کہ علی نور کے پاس صرف اڑتالیس گھنٹے ہیں اور ان کا کوئی بھی دوست ، رشتے دار، سسرالی رشتے دار جس کی عمر 18 سے 45 سال کے درمیان اور بلڈ گروپ بی پازیٹو، بی نیگیٹو، او پازیٹو یا او نیگیٹو ہے، وہ جگر کا عطیہ دے سکتا ہے۔

اسی پوسٹ کے مطابق علی نور اسلام آباد کے الشفاء اسپتال میں زیرعلاج ہیں۔ بعد ازاں معلوم ہوا کہ انہیں پیپاٹائٹس اے کا عارضہ لاحق ہے ، جس کے جگر پر اثرات مرتب ہونے کا امکان ہے۔
ابتدائی اپیل بنیادی طور علی نور کے خاندان والوں سے ہی کی گئی تھی ، تاہم یہ جانے بغیر کہ پاکستانی قانون کے تحت جگر کا عطیہ کو ئی رشتے دار ہی دے سکتا ہے ، سوشل میڈیا پر یہ اپیل دھڑا دھڑ شیئر ہونے لگی ، میوزک انڈسٹری کے بڑے بڑے ناموں نے بھی اسے شیئر کیا۔

صورتحال کو دیکھتے ہوئے علی نور کے بھائی نے معاملے کی وضاحت کرتےے ہوئے کہا کہ ’’دوستو! گھبرانے کی کوئی بات نہیں ہے ، علی نور جلد صحت یاب ہوجائیں گے۔ ان پر یرقان کی ٹائپ اے کا شدید حملہ ہوا ہے اور امکان ہے کہ اس نے ان کے جگر کو نقصان پہنچایا ہو، لیکن ان کی نگہداشت بہترین ڈاکٹرز کررہے ہیں‘‘۔

’’ جہاں تک جگر کے عطیے کی بات ہے تو ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ ہمیں لوگ اسٹینڈ بائی پر درکار ہیں لیکن عطیہ کنندہ صرف خاندان میں سے ہی ہوسکتا ہے – کہ ہمارے ملک کے قوانین ہمیں اس بات کی اجازت نہیں دیتے کہ خاندان سے باہر کا کوئی شخص عطیہ دے۔ لیکن اس سے بھی زیادہ اہم بات یہ ہے کہ انشا اللہ انشاللہ ہمیں اس رستے پر نہیں جانا پڑے گا‘‘۔

انہوں نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ ہم پہلے ہی ان کی حالت میں بہتری دیکھ رہے ہیں اور ہمیں ان کے مداحوں سے اپنے اسٹار کے لیے بس دعائیں درکار ہیں۔

علی نور کے بھائی کے اس بیان کے بعد سوشل میڈیا پر معروف گلوکار کے مداحوں کو قرار آیا ورنہ اس سے قبل ساری شوبز انڈسٹری اور ان کے مداح صدمے کی حالت میں تھے اور بغیر سوچے سمجھے جگر کے عطیے کی اپیل شیئر کررہے تھے ۔ اس وقت انہیں اپنی مداحوں کی دعاوں کی ضرورت ہے اور امید ہے کہ وہ جلد صحت یاب ہو کر ایک بار پھر پہلے کی طرح دلوں کو گرماتے نظر آئیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں