The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں جے شری رام نہ کہنے پر مسلمان نوجوان پر تشدد

نئی دہلی : بھارت میں جے شری رام نہ کہنے پر مسلم شناخت ظاہر کرنے پر ایک اور نوجوان انتہاپسند ہندوؤں کے ہاتھوں بدترین تشدد کا شکار ہوگیا۔

بھارتی میڈیا نے واقعے کی تفصیلات کچھ اس طرح بیان کی کہ متاثرہ نوجوان عامر خان اپنے پڑوسی گاؤں ناگلہ کھیما میں کپڑے فروخت کرنے گیا تھا جہاں حملہ آور باپ بیٹا نے نوجوان سے نام ظاہر کرنے کا مطالبہ کیا۔

حملہ آور باپ بیٹا نے مسلم شناخت ظاہر ہونے پر نوجوان کو لاٹھیوں سے بدترین تشدد کا نشانہ بنایا اور جے شری رام کا نعرہ لگانے پر مجبور کیا۔

متاثرہ نوجوان عامر نے واقعے کی رپورٹ دوا گنج پولیس اسٹیشن میں درج کروائی، جس کے بعد پولیس نے دونوں ملزان کو حراست میں لے لیا ہے۔

پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ واقعہ مذہبی منافرت کا نہیں بلکہ کپڑے کی قیمت پر تنازعے کا ہے، جس کے بعد دونوں فریقین کے درمیان تصادم ہوا تاہم متاثرہ نوجوان عامر خان نے پولیس کے بیان کی تردید کرتے ہوئے مسلمان ہونے پر تشدد کا بنانے پر زور دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں