The news is by your side.

Advertisement

مصطفیٰ کمال نے نیب سے معافی مانگ لی

کراچی: پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے نیب سے معافی مانگتے ہوئے کہا ہے کہ قومی احتساب بیورو کی پریس ریلیز میں مجھ پر الزامات عائد کیے گئے۔

پاکستان ہاؤس میں پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ نیب کی پریس ریلیزمیں مجھ پرالزامات لگائےگئے ہیں، اگر میری بات انہیں گراں گزری ہے تو میں معافی چاہتا ہوں۔

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ دس سال قبل جو شخص شہر کی نظامت کررہا تھا اس سے کام کی تحقیقات کی جائیں، یہ بالکل غلط ہے کیونکہ میں نے جانفشانی اور ایمانداری سے شہر کے لیے کام کیا۔

یاد رہے کہ نیب نے مصطفی کمال کے بیان کو نازیبا، غلیظ اور بیہودہ قراردیتے ہوئے قانونی نوٹس بھیجنے کا فیصلہ کیا اور کہا تھا کہ اگر مصطفیٰ کمال نےاپنےالفاظ پرمعافی نہ مانگی تو قومی احتساب بیورو قانونی چارہ جوئی کا حق رکھتا ہے۔

مزید پڑھیں: مصطفیٰ کمال کی گفتگو نازیبا اور بےہودہ قرار، نیب کا قانونی نوٹس بھیجنے کا فیصلہ

اعلامیے میں قومی احتساب بیورو کے ترجمان کا کہنا تھا کہ نیب قومی ادارہ ہےاوربدعنوانی کےخاتمےکے لیے اقدامات کررہاہے، مصطفیٰ کمال کی نازیباگفتگونیب کی ساکھ مجروح کرنےکی مذموم کوشش ہے۔ قومی احتساب بیورو نے کہا مصطفیٰ کمال نیب پرتنقیدکےبجائےاپنی توانائی مقدمے کے دفاع پر خرچ کریں۔

یاد رہے احتساب عدالت میں مصطفیٰ کمال کے خلاف سرکاری پلاٹوں کی غیرقانونی الاٹمنٹ سےمتعلق کیس زیر سماعت ہیں جبکہ انھوں نے سندھ ہائی کورٹ سے ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کررکھی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں