site
stats
سندھ

ہوسکتا ہے مجھے قتل کرا دیا جائے، مصطفٰی کمال

کراچی : سابق سٹی ناظم کراچی مصطفٰی کمال نے کہا ہے کہ ایم کیوایم کے کسی رہنما کو ساتھ ملنےکانہیں کہوں گا ہوسکتا ہےانہیں لوگوں کےذریعےمجھے قتل کرا دیا جائے۔

یہ بات انہوں نے اے آروائی کے پروگرام پاور پلے میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ مصطفٰی کمال نے کہا ہے کہ ایم کیوایم کےقائد کو کہتا ہوں کہ وہ لوگوں کوورغلانےسےبازآجائیں۔ گلی گلی خون بہانے کی باتوں سے گریز کرنا چاہیئے،

انہوں نے کہا کہ میرا پاکستان واپس آنے کا مقصد ٹیک اوور نہیں کرناہے بلکہ عوام کو دعوت دیناہے۔

مصطفیٰ کمال نے ایک بار پھر وہی بات دہراتے ہوئے کہا کہ وہ برائی کو روک نہیں سکتے لیکن برائی چھوڑ تو سکتے تھے اس لیے انہوں نے یہاں سے جانے کافیصلہ کیا ،لوگ تو کونسلر شپ نہیں چھوڑتے لیکن میں نے سینیٹرشپ چھوڑ دی تھی۔

مصطفیٰ کمال کا کہناتھا کہ متحدہ کے قائد الطاف حسین لوگوں سے جھوٹ بول رہے ہیں ،لوگوں کو دھوکہ دینے کے بجائے اب سچ بولنا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ میرا پیغام ہے کہ اپنے ضمیر کی آواز سنیں کسی انسان کو خدا نہ مانیں، سانحہ بلدیہ فیکٹری کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ انیس قائم خانی اگر اس سانحے میں ملوث ہوئے تو پہلے مجھے پھانسی دی جائے۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top