The news is by your side.

Advertisement

ووٹ کے لیے نہیں، مسائل حل کرنے کے لیے آواز دے رہا ہوں، مصطفیٰ کمال

کراچی : چیئرمین پاک سرزمین پارٹی نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ نے کچرا اٹھانے والے محکمے کو اپنے ہاتھ میں لے لیا ہے اگر انہیں کچرا اٹھانے کا اتنا ہی شوق ہے تو مستعفی ہو کر بلدیاتی نمائندہ بن جائیں اور میں کراچی کی عوام کو ووٹ مانگنے کے لیے بلکہ ان کے مسائل حل کرنے کے لیے آواز دے رہا ہوں۔

وہ کراچی پریس کلب پر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے انہوں نے ایم کیو ایم پاکستان کا نام لیے بغیر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سوال کیا کہ جب شہری حکومت کا ایک محکمہ چھینا گیا تھا تو کیوں استعفے نہیں دیے گئے تھے اگر استعفے دے دیے جاتے یا سڑکوں پر نکلا جاتا تو مقامی حکومت سے مزید محکمے نہ چھینے جاتے یہ ممکن تب ہوتا جب باربار حکومت میں رہنے والے شہر کے مسائل پر توجہ بھی دیتے۔

انہوں نے کہا کہ میئر کراچی کا اپنے ہی شہر میں ترقیاتی کام کروانے والے محکمے کے ڈی اے پر کوئی اختیار نہیں اور کچرا اٹھانے تک کے اختیارات بھی وزیراعلیٰ نے اپنے پاس رکھ رکھے ہیں تو کس طرح مقامی حکومتیں کام کریں گی اور شہریوں کو کچھ ریلیف ملے گا؟

مصطفیٰ کمال نے کہا کہ کراچی کے گھر گھر میرے کارکنان جائیں گے لیکن اس بار عوام سے فطرہ اور زکوۃ مانگنے نہیں یا جلاؤ گھیراؤ کے لیے نہیں بلکہ اپنی روشن مستقبل کے لیے اور شہر کراچی کے مسائل کے حل کے لہیے حتمی جدو جہد میں شامل ہونے کی دعوت دینے جائیں گے اور بتائیں گے کہ کراچی کے مرض کی تشخیص کرلی ہے بس اب گھروں سے نکلو۔

چیئرمین پی ایس پی نے کہا کہ میں ایک دن اورایک وقت بتاؤں گا اور صرف 30 منٹ کے لیے دس لاکھ عوام وہاں پہنچیں گے توسارے مسائل حل ہو جائیں گے اس لیے کراچی والوں میری آواز پر لبیک کہو کیوں کہ میں ووٹ لینے یا کسی مراعات کے لیے نہیں بلایا بلکہ اس شہر کی تقدیر تبدیل کرنے کے لیے دعوت دے رہا ہوں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں