The news is by your side.

Advertisement

مصطفیٰ کمال کو قانون ہاتھ میں‌ لینے کی اجازت نہیں دیں گے، ناصر حسین

کراچی: صوبائی وزیر سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ مصطفیٰ کمال کی سیاست ہوگئی اب وہ لوگوں کو تکلیف میں نہ ڈالیں، کسی شخص کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔

مصطفیٰ کمال کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ریڈ زون میں جلسے جلوس اور ریلی کی اجازت نہیں مگر پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ لوگوں کو قانون ہاتھ میں لینےکی دعوت دے رہے ہیں۔ پی ایس پی کوشارع فیصل کےایک ٹریک پرجلسےکی اجازت دے دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بلدیاتی گورنمنٹ کے اختیارات منتخب نمائندوں کے پاس پہلے سے ہیں تاہم میئر کراچی ایسے اختیارات مانگ رہے ہیں جس سے صورتحال خراب ہونے کا اندیشہ ہے۔

ناصر حسین شاہ نے کہا کہ مصطفیٰ کمال کے پاس مذاکرات کے لیے گئے تھے اور اُن کی جائز بات سنی بھی گئی تھی، سندھ حکومت کو بخوبی علم ہے کہ پی ایس پی کے پاس کتنے لوگ ہیں۔

پڑھیں: ’’ ایک ایک شہری ملین مارچ میں شرکت کرے، مصطفیٰ کمال کی اپیل ‘‘

دوسری جانب ڈسٹرکٹ ویسٹ میں پارٹی پروگرام کے دوران سینیٹر سعید غنی نے مصطفیٰ کمال پر خوب تنقید کی اور کہا کہ دھرنے کی بات وہ لوگ کررہے ہیں جو خود ایک دور میں جرائم میں ملوث رہے تاہم آج پیپلزپارٹی کے شہدا کی قربانیوں کے باعث شہر میں امن لوٹ آیا۔

وقار مہدی نے کہا کہ ایم کیو ایم نے اختلاف رائے رکھنے والے لوگوں کو چن چن کر قتل کیا، دھرنا دینا مصطفیٰ کمال کا حق ہے اور  اُن کے دور میں ہونے والی اربوں روپے کی پر سوال اٹھانا ہماری ذمہ داری ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں