The news is by your side.

Advertisement

مصطفیٰ کمال کی پراجیکٹ ڈائریکٹر کی حیثیت سےمعطلی عدالت میں چیلنج

کراچی : پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال کی پراجیکٹ ڈائریکٹرکی حیثیت سے معطلی چیلنج کردی گئی ، جس میں کہا گیا ہے کہ معطلی غیرقانونی قرار دے کر 3ماہ میں صفائی کا موقع دیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال کی پراجیکٹ ڈائریکٹرکی حیثیت سے معطلی کیخلاف درخواست دائر کردی۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ قانونی تقاضےپورے اورشوکازجاری نہیں ہوا، 26اگست کومیئر وسیم اختر نےسابق ناظم مصطفی کمال کو ڈائریکٹر تعینات کیا، اگلےہی روز مصطفی کمال کو غیرقانونی طور پر معطل کردیاگیا۔

درخواست گزار نے کہا میئر وسیم اختر اوروزارت بلدیات سندھ فرائض نبھانے میں ناکام رہے، عید قربان اوربارشوں کےدوران نااہلی کی سزاکراچی کےشہریوں کوبھگتنا پڑی۔

درخواست میں استدعا کی گئی مصطفی کمال کی معطلی غیرقانونی قرار دے کر 3ماہ میں صفائی کا موقع دیا جائے۔

مزید پڑھیں : میئر کراچی وسیم اختر نے مصطفی کمال کو معطل کردیا

یاد رہے میئر کراچی وسیم اختر نے مصطفیٰ کمال کو شہر کی صفائی کرنے کا ٹاسک دیتے ہوئے پروجیکٹ ڈائریکٹر گاربیج تعینات کیا تھا اور تمام دستیاب وسائل فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا تھا مصطفیٰ کمال 90 دن میں کراچی کا کچرا اٹھا کر دکھائیں۔

بعد ازاں 24 گھنٹوں میں ہی مصطفٰی کمال کوبرطرف کردیا اور کہا مصطفیٰ کمال کےرویے اور بدتمیزی کی وجہ سے انہیں معطل کرتا ہوں، انھوں نے مخلصی کاغلط فائدہ اٹھایااورسیاست چمکاناشروع کردی۔

واضح رہے کہ پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے چیلنج کیا تھا کہ مجھے موقع دیں 90 دن میں کراچی کا کچرا صاف کردوں گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں