The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں بجلی چوری: وزیر اعظم کے بیان پر مصطفیٰ کمال کا رد عمل

کراچی: پاکستان سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے وزیر اعظم کی تقریر پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی والوں سے بجلی کی مد میں زیادہ پیسے لیے جا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں کے الیکٹرک اور سوئی سدرن گیس کمپنی کے مابین اداراتی چپقلش کی وجہ سے پیدا ہونے والا بجلی بحران ختم کرنے کے لیے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کابینہ اجلاس میں کہا تھا کہ جب کراچی والے سو فیصد بل ادا کریں گے، چوری نہیں کریں گے تو لوڈشیڈنگ بھی ختم ہوجائے گی۔

مصطفیٰ کمال نے اپنے بیان میں کہا کہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے کراچی کی بزنس کمیونٹی کے لوگ انتہائی پریشان ہیں، کے الیکٹرک کے اسٹے آرڈر پراعلیٰ عدلیہ نوٹس لے۔

انھوں نے وزیراعلیٰ کی طرف سے خطوط کے سلسلے کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ خط نہ لکھیں بلکہ اپنے ٹیلی فون کا استعمال کریں۔ خیال رہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی طرف سے وزیر اعظم کو لوڈشیڈنگ کے سلسلے میں تین خطوط لکھے گئے ہیں۔

سوئی سدرن گیس کمپنی نے کے الیکٹرک کو گیس سپلائی بحال کردی

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ مجھے ماؤں بہنوں کو سڑکوں پرنکالنے کا شوق نہیں، ہم نے تو اس جدوجہد کو جہاد سمجھ کر شروع کیا ہے، ہمیں مسائل حل کرانے کے لیے شہدا قبرستان آباد کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی کو ہم سے پہلے کسی نے بنایا نہ بعد میں کوئی بنا سکا، ہم نے کراچی پرتین سو ارب روپے خرچ کیے، ایک روپیا حرام نہیں کمایا۔

پی ایس پی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے بیان پر بھی رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ ’ووٹ کوعزت دو‘ کہنے والوں سے کہتا ہوں کہ ووٹ کاغذ کا ایک ٹکڑا ہے، ووٹ نہیں بلکہ ووٹر کو عزت دو، ووٹر انسان ہے۔ خیال رہے کراچی میں وزیر اعظم کے اجلاس کے بعد سوئی سدرن گیس کمپنی نے کے الیکٹرک کی گیس بحال کردی ہے اور شہر میں لوڈ شیڈنگ میں بھی کمی آگئی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں