site
stats
سندھ

دھرنا ختم، مصطفی کمال کا چودہ مئی کو ملین مارچ کا اعلان

پاک سر زمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے سندھ حکومت کو متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکمرانو، اس سے پہلے کہ لوگوں کے ہاتھ تمہارے گریبان تک پہنچیں ان کے حقوق دے دو چیئرمین پی ایس پی نے چودہ مئی کو ملین مارچ کا اعلان کردیا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی پریس کلب پرپی ایس پی کے دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا،
پاک سر زمین پارٹی کے سربراہ مصطفی کمال نے دھرنا ختم کر کے چودہ مئی کو ملین مارچ کا اعلان کردیا۔

انہوں نے کہا کہ دس لاکھ لوگوں کے ساتھ حکمرانوں کے محلوں کے باہر احتجاج کریں گے، پی ایس پی کے دھرنے کے آخری روز شہر بھر سے پی ایس پی کے کارکنان ریلیوں کی شکل میں پریس کلب پہنچے۔

مصطفیٰ کمال کا شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آج دھرنے کا آخری روز ہے، یہ لوگ حکمرانوں کےخلاف نعرے لگا کر یہاں سے اٹھ رہے ہیں اور لوگ کسی میڈیا ہاؤس پرحملے کرنے نہیں جارہے، ہم یہاں سے اٹھ کر اگلے مرحلے میں جارہےہیں۔

مصطفی کمال نے کہا کہ یہ کراچی شہر لاوارث نہیں ہے، اب اس کے وارث آگئے ہیں جبکہ یہاں کے عوام حوصلہ ہار کر یہ سمجھ بیٹھے تھے کہ ان کے مسائل حل نہیں ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ 30 سال میں شہر کے حقوق کیلئے کسی نے آواز نہیں اٹھا ئی لیکن ہم لوگوں کے حقوق کےلیے یہاں موجود ہیں۔

ہم نے کراچی کے ایک ایک گھر کو جگا دیا ہے۔ میں حکمرانوں کو کہنا چاہتا ہوں کہ آؤ دیکھ لو ہم سب کراچی کے وارث آج سڑکوں پر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم16مطالبات لے کرکراچی کے ایک ایک گھر پرجائیں گے، پی ایس پی غریبوں کی پارٹی ہے، عوام کو ٹرانسپورٹ نہیں دےسکتی۔

چیئرمین پی ایس پی مصطفیٰ کمال نے احتجاج کے دوسرے مرحلے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ہم دوسرےمرحلے میں کراچی کے عوام کو آواز دینے جا رہے ہیں، 14 مئی کو کراچی میں 10 لاکھ لوگوں کو جمع کرکے بھرپور احتجاج کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ لوگوں کے بنیادی مسائل کےحل کیلئے حکمرانوں کے ایوانوں کی طرف مارچ کرینگے، چیئرمین پی ایس پی مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ اپنے 16 مطالبات سے پیچھےنہیں ہٹ سکتا، ہم پرامن مارچ کریں گے، حقوق سے حقوق سے دست بردار نہیں ہو سکتے۔

انڈیا اور پاکستان کے چاہنے والےایک ساتھ نکلےہیں، انیس ایڈووکیٹ

اس سے قبل شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے پاک سرزمین پارٹی کے رہنما انیس ایڈووکیٹ نے ایم کیو ایم پاکستان کی ریلی پر شدید تنقید کی۔

اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ انڈیا اور پاکستان کے چاہنے والےایک ساتھ نکلےہیں، ریلی کےبعد یہ لوگ خطاب کریں گےاور پھر گھر جا کر کوکین پیئں گے۔

لندن میں بانی متحدہ بھی نشے کی حالت میں یہ سب دیکھ رہےہیں، کراچی میں فاروق ستارعرف چھوٹےچیتن کی سیاست ختم ہورہی ہے۔ انیس ایڈووکیٹ نے کہا کہ ایم کیو ایم انڈیا اور نام نہاد ایم کیو ایم پاکستان ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top