The news is by your side.

Advertisement

لانڈھی کے عوام کو دہشتگردوں کے چنگل سے آزاد کرایا جائے، متحدہ اراکین اسمبلی

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ کے حق پرست اراکین سندھ اسمبلی خالد افتخار ، عامرمعین اور وقار حسین شاہ نے لانڈھی میں جرائم پیشہ حقیقی دہشت گردوں کی کھلی غنڈہ گردی اور عوام کو پانی اور بجلی کی فراہمی اسلحہ کے زور پر روکنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ لانڈھی کے عوام کو کھلی دہشت گردی کانشانہ بنانے کے بعد اب عوام کو قائد تحریک سے محبت اور عقیدت رکھنے کی پاداش میں پانی اور بجلی کی فراہمی تک روک دی گئی ہے اور اس پر حکومت اور انتظامیہ حقیقی دہشت گردوں کے آگے مکمل طور پر بے بس دکھائی دیتی ہے ۔

اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہا کہ لانڈھی میں حقیقی دہشت گردوں کی سرکاری سرپرستی میں مجرمامہ سرگرمیوں کے باعث امن و امان کی صورتحال انتہائی مخدوش ہوچکی ہے. جرائم پیشہ حقیقی دہشت گردوں نے لانڈھی میں عوام کو بجلی اور پانی کی سپلائی روکنے کیلئے ان اداروں کی سرکاری عمارتوں پر اسلحہ کے زور پرقبضہ کررکھا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔

انہوں نے کہا کہ جرائم پیشہ حقیقی دہشت گرد وں کی سرکاری سرپرستی میں کھلی دہشت گردی ، ایم کیوایم کے کارکنان کے گھروں پر حملے ، انہیں تشدد کا نشانہ بنانے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے کے اوچھے ہتھکنڈے کامیاب نہیں ہوئے تو ایم کیو ایم قائد اور لانڈھی کے عوام کے درمیان محبتیں ختم کرنے کیلئے حقیقی دہشت گردوں نے یزیدی دور کے مظالم کو اپنا لیا ہے اور اس کھلے ظلم و بربریت پر حکومت سندھ او ر ضلعی انتظامیہ خاموش تماشائی بنی بیٹھی ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت سندھ اور ضلعی انتظامیہ نے ایم کیو ایم قائد کا ساتھ دینے کی پاداش میں لانڈھی کے عوام کوجرائم پیشہ حقیقی دہشت گردوں کے سپرد کردیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ جرائم پیشہ حقیقی دہشت گردوں کی کھلی دہشت گردیوں اور غنڈہ گردی کے واقعات کی ایف آئی آر درج کرانے کے باوجود ایک جانب عوام کی کوئی سنوائی نہیں ہورہی ہے اور دوسری جانب حقیقی دہشت گردوں کو کھلی غنڈہ گردی کا لائسنس دیدیا گیا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ لانڈھی میں پانی اور بجلی کے بحران کے اصل ذمہ دار حقیقی دہشت گرد ہی ہیں اور بجلی اور پانی کی عمارتوں پر اسلحہ کے زور پر قبضہ کرکے حقیقی دہشت گردوں نے واضح کردیا ہے کہ انہیں مکمل طور پر سرکاری سرپرستی حاصل ہے ۔

انہوں نے کہاکہ کراچی آپریشن کے نام پر ایم کیوایم کے بے گناہ کارکنان کو گھروں سے سوئی ہوئی حالت میں گرفتار کیاجارہا ہے جبکہ جرائم پیشہ حقیقی دہشت کھلی دہشت گردی اور غندہ گردی کے باوجود قانون کی گرفت سے محفوظ ہیں ۔

خالد افتخار ، عامر معین اور وقار حسین شاہ نے وزیراعظم نواز شریف اور وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ سے مطالبہ کیا کہ جرائم پیشہ حقیقی دہشت گردوں کو حاصل سرکاری سرپرستی کا سلسلہ بند کرایاجائے.

لانڈھی کے عوام کو اسلحہ کے زور پر پانی اور بجلی کی فراہمی روکنے میں ملوث حقیقی دہشت گرودں کو گرفتار کیاجائے اور سرکاری عمارتوں سے حقیقی دہشت گردوں کا قبضہ فی الفور ختم کرایاجائے.

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں