site
stats
پاکستان

متحدہ وحدت المسلمین کل کراچی کی 4 اہم شاہراہوں پر احتجاجی دھرنا دے گی

کراچی: متحدہ وحدت المسلمین نے کل بروز جمعہ کراچی کی 4 اہم مرکزی شاہراوں سمیت ملک بھر کے 100 سے زائد مقامات پر احتجاجی دھرنے دینے کا اعلان کیا ہے،دھرنے علامہ ناصر عباس جعفری کی بھوک ہڑتال کو 69 روز ہونے کے باوجود ارباب اختیار کی جانب سے توجہ نہ دینے پر کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے ترجمان علامہ مختار امامی کراچی پریس کلب میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے،انہوں نے اعلان کیا کہ 22جولائی کو ملت تشیع اپنے حقوق کی شناخت کے لیے سڑکوں پر ہو گی کیوں کہ کل علامہ ناصر عباس جعفری کی بھوک ہڑتال کو 69 روز پورے ہو جائیں گے اس کے باوجود حکمرانوں اور ارباب اختیار و اقتدار کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگی ہے۔

واضح رہے مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے ملک میں جاری شیعہ ٹارگٹ کلنگ، ریاستی جبراور ملک و قوم کے مفادات کے منافی حکومتی پالیسیوں کے خلاف13مئی کو بھوک ہڑتال کا آغاز کیاجس کوآج 69 روز گزر چکے ہیں۔ میڈیکل بورڈنے ان کی صحت کے حوالے سے شدید تشویش کا اظہار کر رکھا ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ علامہ ناصر جعفری کی 69 روز سے جاری بھوک ہڑتال نے حکمرانوں کی بے حسی اور غفلت کی قلعی کھول دی ہے چنانچہ کل شام 5کے بعد شہر قائد کراچی کی 4اہم اور مرکزی شاہراہوں سمیت ملک بھر میں 100سے زائد مقامات پر پُرامن احتجاجی دھرنے دیئے جائیں گے اب فیصلہ بھوک ہڑتالی کیمپ میں بیٹھنے کی بجائے شاہرواں پر ہو گا۔

اس موقع پر متحدہ وحدت المسلمین کے ترجمان علامہ مختار امامی نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ جب تک شیعہ نسل کشی میں ملوث افراد کے خلاف ریاستی و عسکری اداروں کی طرف سے ملک گیر آپریشن کا آغاز نہیں کیا جاتا تب تک مختلف اندازمیں ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔

متحدہ وحدت المسلمین نے ماہ رمضان میں کالعدم جماعتوں کی طر ف سے کراچی اور دیگر شہروں میں چندہ اکھٹا کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قومی سلامتی کے اداروں اور حکومتی رٹ کو سرعام چیلنج کرنے کے مترادف ہے،کالعدم جماعتوں کے خلاف فوری کاروائی کی جائے جو نام بدل کر اپنی سرگرمیوں میں مصروف ہیں۔

اس سے قبل قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ،تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان،پاکستان مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین سمیت ملک کی تمام بڑی سیاسی و مذہبی جماعتوں کے مرکزی رہنماوٴں نے بھوک ہڑتالی کیمپ کا دورہ کر کے علامہ ناصر عباس سے اظہار یکجہتی کرنے کے ساتھ اُ نے مطالبات کو قانونی اور آئینی قرار دیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top