The news is by your side.

Advertisement

میانمار: پولیس اور فوج کی مظاہرین پر فائرنگ : 38 ہلاک

نیپیداو : میانمار میں جمہوری حکومت کے خاتمے اور فوجی بغاوت کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین پر پولیس نے دھاوا بول دیا جس کے نتیجے میں38افراد ہلاک ہوگئے۔

پولیس کی جانب سے مظاہرین پر گولیاں چلانے، آنسو گیس کے شیل داغنے اور ربر کی گولیاں چلانے کی ملک بھر سے خبریں موصول ہوئی ہیں۔

غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے مطابق ماہ فروری میں کی گئی فوجی بغاوت کے خلاف ہونے والے مظاہروں کے دوران بدھ تین مارچ سب سے بد ترین دن رہا۔

سکیورٹی فورسز نے کئی شہروں اور قصبوں میں مظاہرین پر گولیوں نیز آنسو گیس کے شیل اور ربر کی گولیوں کا استعمال کیا۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ پولیس اور جوانوں نے معمولی تنبیہ کرتے ہوئے مظاہرین پر براہ راست اندھا دھند فائرنگ کر دی تھی، جس سے ریلی میں شریک 38 افراد ہلاک ہوئے۔

نیویارک میں واقع اقوام متحدہ کے دفتر میں میانمار کے خصوصی ایلچی کرسٹین شرینر برگنر نے کہا ہے کہ یکم فروری سے بغاوت کے بعد آج کا دن سب خونریز دن تھا، بغاوت کے آغاز کے بعد سے اب تک 50 سے زائد افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں