The news is by your side.

Advertisement

عثمان بزدار سے ملاقات کیوں کی؟ ن لیگ کا اپنے اراکین اسمبلی کیخلاف بڑا فیصلہ

لاہور : نواز لیگ نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کرنے کی پاداش میں چھ ن لیگی اراکین اسمبلی کو سزا دے دی، 6 ایم پی ایز کی بنیادی رکنیت معطل کرکے شوکاز نوٹس جاری کردیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے ملاقات کرنے والے چھ ارکان کی بنیادی رکنیت معطل کرتے ہوئے انہیں شوکاز نوٹس جاری کردیے ہیں مذکورہ اراکین اسمبلی کو ان شوکاز نوٹسز کا جواب دینے کیلئے ایک ہفتے کی مہلت دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ تین روز قبل ن لیگ سے تعلق رکھنے والے 6 رکن پنجاب اسمبلی نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے ملاقات کی اور انہیں اپنے حلقتے کے مسائل سے آگاہ کیا، ان ارکان اسمبلی میں چوہدری اشرف، نشاط ڈاہا، محمد ارشد، فیصل نیازی ، اظہر عباس اور غیاث الدین شامل تھے۔

بعد ازاں ایک ٹی وی پروگرام میں اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ن لیگی ایم پی اے نشاط ڈاہا کا کہنا تھا کہ پارٹی کی اجازت کے بغیر وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات کی۔ اگر میں لوٹا ہوں تو پھر نواز شریف بھی لوٹا ہے۔

مزید پڑھیں : نوازشریف خود لوٹے ہیں، ن لیگی ایم پی اے

ان کہنا تھا کہ اگر پارٹی انہیں نکالنا چاہتی ہے تو نکال دے، انہوں نے کہا کہ میں حلقے کے عوام کے مسائل کے حل اور ان کی ترقی کی خاطر وزیراعلیٰ پنجاب سے ملا تھا۔

انہوں نے کہا کہ مجھے پارٹی سے نکالنے کی کسی میں جرات نہیں ہے، حمزہ شہباز کو چیلنج کرتا ہوں مجھے پارٹی سے نکال کر دکھائیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں