The news is by your side.

Advertisement

این اے249: دوبارہ گنتی کے دوران تصادم کاخطرہ، کمانڈوز طلب

این اے249 سے متعلق دوبارہ گنتی کے موقع پر سیاسی کارکنوں میں تصادم کے خطرہ کے پیش ‏نظر الیکشن کمیشن نے کمانڈوز تعیناتی کی درخواست کر دی۔

صوبائی الیکشن کمیشن نے آئی جی سندھ اور ڈی رینجرز کو خط لکھ کر اضافی سیکورٹی فراہم ‏کرنے کی درخواست کی ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ این اے249 میں دوبارہ گنتی کے دوران تصادم کا خطرہ ہے اور امن و امان ‏کو برقرار رکھنے کے لیے کمانڈوز تعینات کیےجائیں۔

خط کے مطابق کل9 بجے سےگنتی مکمل ہونےتک کمانڈوز تعینات کیےجائیں تاکہ کسی بھی ‏ناخوشگوار صورتحال کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

واضح رہے کہ تیس اپریل کو شہر قائد میں انتخابی حلقے این اے 249 کا ضمنی انتخاب کا میدان ‏‏پاکستان پیپلز پارٹی نے اپنے نام کیا تھا، غیر حتمی نتائج کے مطابق پیپلز پارٹی کے قادر خان مندو ‏‏خیل 16 ہزار 156 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے تھے، مسلم لیگ (ن) کے مفتاح اسماعیل 15 ہزار ‏‏‏473 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، جب کہ کالعدم تحریک لبیک پاکستان کے مفتی نذیر 11 ہزار ‏‏‏125 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے تھے۔

الیکشن کمیشن نے نون لیگی امیدوار مفتاح اسماعیل کی جانب سے حلقہ این اے 249 میں ووٹوں ‏‏کی دوبارہ گنتی سے متعلق درخواست پر فیصلہ سنایا ہے۔

ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب نے الیکشن کمیشن کی جانب سے این اے 249 میں دوبارہ ‏‏گنتی سے متعلق فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ فیصلے پر اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتے ہیں، ‏‏اپیل اور ہمیں سننےکے بعد الیکشن کمیشن نےدوبارہ گنتی کافیصلہ کیا، ہمیں امید ہے کہ دوبارہ ‏‏گنتی ہوگی توہم ہی کامیاب ہونگے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں