The news is by your side.

Advertisement

نیب کی کارروائیاں، سیکریٹری بلدیات نے دفتری امور احتجاجاً بند کردیے

کراچی: قومی احتساب بیورو کی کارروائیوں کے خلاف سیکریٹری بلدیات سندھ نے  احتجاجاً کام بند کرتے ہوئے مؤقف اختیار کیا ہے کہ نیب کی کارروائی قانون کے خلاف ہیں۔

تفصیلات کے مطابق نیب نے محکمہ بلدیات کے ذاتی سیکریٹری رمضان سولنگی کے گھر چار روز قبل چھاپہ مارکر بھاری تعداد میں کرنسی نوٹ، سونا اور پرائز بانڈ سمیت دیگر قیمتی اشیاء برآمد کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کیا تھا جس سے تفتیش جاری ہے۔

قومی احتساب بیورو نے کرپشن کے خلاف کارروائیوں کا دائرہ بڑھاتے ہوئے محکمہ بلدیات سندھ میں کارروائی کی جس کے دوران سیکریٹری بلدیات کی اُن سے تلخ کلامی ہوئی اور انہوں نے احتجاجاً کام روک دیا۔

سیکریٹری بلدیات رمضان اعوان نے چیف سیکریٹری سندھ کو فون کر کے نیب کارروائیوں کے حوالے سے آگاہ کرتے ہوئے انہیں خلاف قانون قرار دیا، اُن کا کہنا تھا کہ قومی احتساب بیورو کی کارروائیاں قانون کی خلاف ورزی ہے، 17 گریڈ کا نیب افسر 20 گریڈ کے افسر سے بدتمیزی کررہا ہے۔

مزید پڑھیں: محکمہ بلدیات سندھ کے ملازم کے گھر سے کروڑوں روپے برآمد

اُن کا کہنا تھا کہ نیب افسرغیراخلاقی،غیرقانونی حرکتوں پراترآئے ایسی صورتحال میں کام کرنا ممکن نہیں اس لیے کام بند کررہا ہوں، بعد ازاں سیکریٹری بلدیات رمضان اعوان کام چھوڑکردفتر سےچلےگئے۔

 

واضح رہے کہ چار روز قبل یعنی 20 اپریل کو قومی احتساب بیورو (نیب) نے گرفتار ملزم رمضان سولنگی کی نشاندہی پر گارڈ ن کے علاقے میں چھاپہ مارا تو  وہاں سے  3 کروڑ 15 لاکھ روپے مالیت کے ملکی و غیر ملکی کرنسی نوٹ، 100 تولے سونا، 18 لاکھ روپے مالیت کے پرائز بانڈ، زیورات، گھڑیاں اور دیگر قیمتی اشیا برآمد ہوئیں۔

نیب نے مزید تفتیش کےلیے ملزم کو احتساب عدالت میں پیش کر کے ایک روزہ جسمانی ریمانڈ مانگا جسے عدالت نے منظور کرلیا، ذرائع کے مطابق رمضان سولنگی نے دورانِ تفتیش اہم انکشافات کیے جس کی بنیاد پر کارروائیوں کا دائرہ بڑھا دیا گیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں