The news is by your side.

Advertisement

رینٹل پاور کیس، نیب نے سابق وفاقی سیکریٹری شاہد رفیع کو گرفتار کرلیا

اسلام آباد: رینٹل پاور کیس میں نیب نے کارروائی کرتے ہوئے سابق وفاقی سیکریٹری شاہد رفیع کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق نیب راولپنڈی نے رینٹل پاور کیس میں بڑی کارروائی کرتے ہوئے سابق وفاقی سیکریٹری شاہد رفیع کو گھر سے گرفتارکرلیا، چھاپے کے دوران اسکینڈل سے متعلق اہم دستاویزات بھی برآمد کرلی گئی ہیں۔

نیب ذرائع کے مطابق شاہد رفیع رینٹل پاور کیس کے 11 ریفرنس میں ملزم نامزد ہیں، سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف بھی اس ریفرنس میں ملزم ہیں، نیب ٹیم کل شاہد رفیع کو احتساب عدالت میں پیش کرے گی۔

واضح رہے کہ اسکینڈل میں کنوک گلوبل کمپنی کے ڈائریکٹر لائق احمد پہلے گرفتار ہوچکے ہیں، نیب ذرائع کے مطابق کنوک گلوبل کمپنی ایک آف شور کمپنی بھی چلارہی ہے، لائق احمد سابق صدر آزاد کشمیر راجہ ذوالقرنین کے بیٹے کے فرنٹ مین ہیں۔

بابر ذوالقرنین نے آف شور کمپنی اکاؤنٹ سے لائق احمد کو رقم بھیجی، بابر ذوالقرنین نے لائق احمد کو 3 لاکھ 65 ہزار ڈالر منتقل کیے۔

یاد رہے کہ رینٹل پاور کیس میں پیپلزپارٹی کے رہنما راجہ پرویز اشرف سمیت دیگر ملزمان پر سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے دور میں کرپشن اور عہدے کا غلط استعمال کرنے کا الزام ہے۔

راجہ پرویز اشرف نے بطور وزیر برائے پانی و بجلی کرائے کے بجلی گھروں کے منصوبوں کی منظوری دی تھی جس سے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں