The news is by your side.

Advertisement

فریال تالپور کو آج رات کراچی منتقل کرنے کا فیصلہ، گھر سب جیل قرار

اسلام آباد : نیب نے رکن سندھ اسمبلی فریال تالپور کو آج رات کراچی منتقل کرنے کا فیصلہ کرلیا جبکہ کراچی میں خیابان شمشیر فیز 8 کےگھر کو سب جیل قرار دے دیا گیا ، فریال تالپور سندھ اسمبلی کے بجٹ اجلاس تک کراچی میں موجود رہیں گی۔

تفصیلات کے مطابق نیب نے رکن سندھ اسمبلی فریال تالپور کو آج رات کراچی منتقل کرنے کا فیصلہ کرلیا، نیب کے 3افسران مجبتیٰ خان،افشاں بشارت اورعارفہ خان ساتھ جائیں گے اور سندھ اسمبلی کے اجلاس تک فریال کراچی میں رہیں گی۔

نیب ذرائع کا کہنا ہے فریال تالپور کو پی آئی اے کی پرواز سے شام 7بجے کراچی لے جایا جائے گا، بجٹ کی منظوری تک فریال تالپور کو سندھ اسمبلی لایا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق کراچی میں خیابان شمشیر فیز 8 کےگھر کو سب جیل قرار دے دیا گیا اور نیب نے ہاؤس نمبر 19 کو سب جیل قرار دینے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے ، نیب راولپنڈی اورکراچی کےاہلکار سب جیل پر ڈیوٹی دیں گے۔

اسپیکر سندھ اسمبلی نے فریال تالپور کے پروڈکشن آرڈر جاری کیے تھے۔

خیال رہے آج فریال تالپور کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں احتساب عدالت میں پیش کیا گیا ، جہاں عدالت نے فریال تالپورکا 14 روزہ جسمانی ریمانڈمنظور کرتے ہوئے جسمانی ریمانڈمیں8جولائی تک توسیع کردی۔

مزید پڑھیں : جعلی اکاؤنٹس کیس: فریال تالپور کے جسمانی ریمانڈ میں 8 جولائی تک توسیع

بعد ازاں پولی کلینک کےخصوصی میڈیکل بورڈ نے فریال تالپور کا طبی معائنہ کیا ، جس میں فریال تالپورکابلڈپریشرلیول 140/80 اور شوگرلیول معمول کےمطابق تھا۔

یاد رہے 10 جون کو جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور کی درخواست ضمانت مسترد کردی تھی اور گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا، جس کے بعد 14ا جون کو پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما فریال تالپور کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں نیب نے گرفتار کیا تھا اور ان کی رہائش گاہ کو سب جیل قرار دے دیا گیا تھا۔

اگلے روز فریال تالپور کو احتساب عدالت میں پیش کیا گیا ، جہاں نیب نے تفتیش کے لیے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی تاہم احتساب عدالت نے فریال تالپور کا 9 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے 24 جون کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں