The news is by your side.

Advertisement

کرپشن ریفرنس ، شہباز شریف کے بعد ان کے بیٹے حمزہ شہباز کےگرد گھیرا تنگ

حمزہ شہباز کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں اور رمضان شوگر ملز کا ریفرنس رواں ماہ کے آخر دائر کیا جائے گا

لاہور : قومی احتساب بیورو (نیب) نے غیر قانونی اثاثوں اور رمضان شوگرملزکیس میں حمزہ شہباز کو نامزد کرنے کا فیصلہ کرلیا، ذرائع کا کہنا ہے شہباز شریف اور  حمزہ شہباز کے خلاف کرپشن ریفرنس اسی مہینے دائر کیا جائےگا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کے بعد ان کے بیٹے حمزہ شہباز کے گرد بھی گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب نے غیر قانونی اثاثوں اور رمضان شوگر ملز کیس میں شہباز شریف کے ساتھ حمزہ شہباز کو بھی نامزد کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

باپ بیٹے کے خلاف ریفرنس کی حتمی منظوری چیئرمین نیب دیں گے

ذرائع

نیب ذرائع نے کہا کہ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں اور رمضان شوگر ملز کا ریفرنس رواں ماہ کے آخر دائر کر دیا جائے گا، باپ بیٹے کے خلاف ریفرنس کی حتمی منظوری چیئرمین نیب دیں گے۔

ذرائع کے مطابق نیب نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے اثاثوں کی تفصیل اور بینک ریکارڈ حاصل کر رکھا ہے، نیب نے شہباز شریف سے جیل میں تفتیش کے لیے عدالت سے اجازت بھی حاصل کر رکھی ہے۔

خیال رہے کہ حمزہ شہباز آمدن سے زائد اثاثوں اور رمضان شوگر ملز کیس میں 2 بار نیب میں پیش ہو چکے ہیں۔

مزید پڑھیں : نیب میں پیشی، حمزہ شہبازسے ڈیڑھ گھنٹہ تفتیش

واضح رہے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے دونوں بیٹوں حمزہ شہباز اور سلمان شہباز پر سرکاری خزانے کے غیر قانونی استعمال کا الزام ہے جبکہ گرفتار کیے جانے کے خدشہ کے باعث حمزہ شہباز نےلاہور ہائی کورٹ سے حفاظتی ضمانت لے رکھی ہے۔

بعد ازاں 11 دسمبر کوایف آئی اے نے اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کے بیرون ملک فرار ہونے کی کوشش ناکام بنادی، وہ غیرملکی ایئرلائن کی پروازسے دوحہ جارہے تھے۔

نیب نے وزارتِ داخلہ سے سابق وزیر اعلیٰ پنجاب کے دونوں صاحب زادوں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی تھی اور اس ضمن میں وزارت داخلہ کو مراسلہ بھی ارسال کر دیا تھا۔

خیال رہے سابق وزیراعلیٰ پنجاب اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے عہدے پر برا جمان شہباز شریف اس وقت مختلف کیسز میں نیب کے زیر حراست ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں