site
stats
پاکستان

نیب اجلاس میں اہم شخصیات کے خلاف تحقیقات کی منظوری

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس قومی احتساب بیورو کے چیئرمین قمر زمان چوہدری کی زیر صدارت نیب ہیڈ کوارٹرمیں منعقد ہوا جس میں اہم شخصیات کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری دی گئی۔

اجلاس میں سندھ کے سابق وزیر برائے پاپولیشن سیّد علی مراد شاہ کے خلاف انکوائری، ٹھٹھہ سے سابق رکن سندھ اسمبلی غلام قادر پلیجو کے خلاف شکایت کی جانچ پڑتال، سابق چیئرمین پاکستان سٹیل ملز معین شیخ آفتاب کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے اور سابق ممبر ایڈمن فیڈرل بورڈ آف ریونیو شاہد حسن جتوئی کے خلاف انکوائری، سابق صدر نیشنل بینک آف پاکستان اور دیگر کے خلاف انویسٹی گیشن کی منظوری دی گئی۔

نیب کے ایگزیکٹو بورڈ نے سابق چیئرمین پاکستان سٹیل ملز معین شیخ آفتاب کے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس مقدمہ میں ملزم پر اختیارات کے ناجائز استعمال کے ذریعے قومی خزانہ کو 378.196 ملین روپے کا نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔

اجلاس میں سابق وزیر برائے پاپولیشن سندھ سیّد علی مردان شاہ کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کیا گیا۔ ملزم پر اختیارات سے تجاوز، سرکاری فنڈ میں لاکھوں روپے کی خوردبرد، سرکاری اراضی پر دکانوں کی تعمیر اور تجاوزات اور ناجائز ذرائع سے اثاثے بنانے کا الزام ہے۔

ایگزیکٹو بورڈ نے سابق ممبر ایڈمن فیڈرل بورڈ آف ریونیو شاہد حسین جتوئی اور دیگر کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کیا۔ ملزم پر اختیارات کے ناجائز استعمال کے ذریعے بدعنوانی، غیر قانونی ترقیوں، تعیناتیوں اور ناجائز ذرائع سے اثاثے بنانے کا الزام ہے۔

اجلاس میں وائس چانسلر یونیورسٹی ایجوکیشن لاہور اور دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری بھی دی گئی۔ ملزمان پر یونیورسٹی آف ایجوکیشن لاہور میں غیر قانونی تعیناتیوں کا الزام ہے۔

اجلاس میں سی ڈی اے کے افسران، میسرز پارک لائن اسٹیٹ کمپنی پرائیویٹ لمیٹڈ اور دیگر کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کیا گیا۔ سی ڈی اے حکام پر محکمہ جنگلات پنجاب کی زمین غیر قانونی طریقہ سے پارک لائن اسٹیٹ کمپنی پرائیویٹ لمیٹڈ کو منتقل کرنے کا الزام ہے۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین نیب چوہدری قمر زمان نے کہا کہ نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے آگاہی، قانون پر عملدرآمد اور تدارک کی زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بدعنوان عناصر اور مفرور ملزموں کی گرفتاری کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے ۔ انہوں نے نیب حکام کو ہدایت کی کہ وہ میرٹ اور قانون پر عمل کرتے ہوئے بدعنوان عناصر کے خلاف شکایت کی جانچ پڑتال، انکوائری اور انویسٹی گیشن کا عمل مکمل کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top