احد چیمہ کی گرفتاری: نیب نےپنجاب حکومت کےموقف کی پھرتردید کردی -
The news is by your side.

Advertisement

احد چیمہ کی گرفتاری: نیب نےپنجاب حکومت کےموقف کی پھرتردید کردی

لاہور: نیب نے سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ کی گرفتاری کے بعد حکومت پنجاب کے موقف کی تردید کرتے ہوئے حقائق بیان کردیے۔

تفصیلات کے مطابق نیب کی جانب سے جاری اعلامیے میں حکومت پنجاب کے موقف کی تردید کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ پی ایل ڈی سی سےآشیانہ اقبال پراجیکٹ ایل ڈی اے کو دیا گیا، پنجاب حکومت نے 20 جنوری 2015 کو اقدام کیا۔

نیب ترجمان کے مطابق سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ نے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا، بطور جوائنٹ وینچر ٹھیکا کاسا ڈویلپرزکودیا گیا۔

نیب اعلامیے کے مطابق جوائنٹ وینچرکے تحت اسپارکو کنسٹرکشن کے9 فیصد شیئرزتھے، اسپارکوکنسٹرکشن کو کاسا ڈویلپرزکی فرنٹ کمپنی ظاہر کرنا غیرقانونی تھا۔

ترجمان نیب کے مطابق 90 فیصد شیئرز بسم اللہ انجینئرنگ کی ملکیت تھے، بسم اللہ انجینئرنگ کو14 ارب کا ٹھیکا دیا گیا، احد چیمہ نے پرپوزل ریکویسٹ تیار کیں بلکہ منظوربھی کرائیں۔

نیب اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ کاسا ڈویلپرزکو14ارب کا ٹھیکا اختیارات کا ناجائزاستعمال کرتے ہوئے دیا، ملی بھگت سے مارچ 2015 میں ٹھیکا پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت دیا۔

ترجمان نیب کے مطابق اصل لیڈ کمپنی بسم اللہ انجینئرنگ خود بڑا پراجیکٹ لینے کے لیے نااہل تھی، ٹھیکے کے لیے ایکٹ کے تحت شیئرہولڈرزکی تفصیلات حاصل کرنا لازم ہے۔

نیب کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ احد چیمہ نے جے وی ممبران کی ملی بھگت سےایم اویو منظورکیا، ایم او یوکے تحت شیئر ہولڈرز کی تفصیلات کو پوشیدہ رکھا گیا۔


احد چیمہ کے خلاف نیب کے پاس ٹھوس شواہد موجود ہیں‘ نیب


یاد رہے کہ گزشتہ روزقومی احتساب بیورو کے ترجمان نے کہا تھا کہ احد چیمہ کو قانون کے مطابق گرفتار کیا گیا، ان کے خلاف نیب کے پاس ٹھوس شواہد موجود ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں