The news is by your side.

Advertisement

نیب کسی سے ذاتی اور سیاسی انتقام پر یقین نہیں رکھتا، چیئرمین نیب جاوید اقبال

اسلام آباد: چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کسی سے ذاتی اور سیاسی انتقام پر یقین نہیں رکھتا، احتساب سب کے لیے کی پالیسی کے تحت کام کام اور صرف کام ہورہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نیب ہیڈ کوارٹر میں چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت اجلاس منعقد ہوا جس میں نیب کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔

نیب کے مطابق 5 ماہ میں 226 افراد گرفتار کیا گیا، 55 شکایات کی جانچ پڑتال ہوئی،39 انکوائریاں، 33 انویسٹی گیشن کی منظوری دی گئی، بدعنوانی کے 197 ریفرنس دائر کئے گئے، 27 ملزمان کو احتساب عدالت نے سزا دی۔

چیئرمین نیب جاوید اقبال نے کہا کہ ہم کرپشن فری پاکستان کے لیے پُرعزم ہیں، ذمہ داریاں سنبھالتے ہوئے عزم کیا تھا کہ انصاف ہوتا ہوا نظر آئے گا، ہر پاکستانی بدعنوانی کے خاتمے کے لیے نیب کی طرف دیکھ رہا ہے۔

جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ بدعنوانی کا خاتمہ پوری قوم کی آواز ہے، وہ وقت دور نہیں جب پورے پاکستان کو بدعنوانی سے پاک کردیں گے، نیب افسران شفافیت، شواہد اور قانون کے مطابق کام کریں۔

مزید پڑھیں: کرپشن اب دیمک نہیں کینسر بن چکی ہے، اسے ختم کرنا ہوگا، جسٹس (ر ) جاوید اقبال

واضح رہے کہ اس سے قبل چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ کرپشن اب دیمک نہیں کینسر بن چکی ہے، ملک سے کرپشن کے خاتمے کے لیے کسی سرزنش کی پرواہ نہیں کریں گے، نیب کے اقدامات ترقی کی راہ میں رکاوٹ نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ نیب انسان دوست ادارہ ہے اس کا مقصد ملک سے کرپشن کا خاتمہ ہے، صرف نیب نے نہیں ہم سب کو مل کر برائیوں کے خاتمے کے لیے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں