The news is by your side.

Advertisement

نیب نے آغا سراج درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا ریفرنس دائرکردیا

ٌکراچی : نیب حکام نے اسپیکرسندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کاریفرنس دائرکردیا، دائر ریفرنس میں آغاسراج سمیت بیس ملزمان کونامزدکیاگیا ہے، ملزمان پر ایک ارب ساٹھ کروڑ روپے کی کرپشن کا الزام ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو (نیب ) نے تین مہینے دس دن تفتیش کے بعد آغا سراج درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کاریفرنس دائرکردیا، کراچی کی احتساب عدالت میں دائر ریفرنس میں آغاسراج سمیت بیس ملزمان کونامزدکیاگیاہے۔

نیب نے الزام عائد کیا ہے کہ ملزمان نےایک ارب ساٹھ کروڑروپےکی کرپشن کی ہے، ریفرنس ابھی باقاعدہ سماعت کے لئےمنظورنہیں کیا گیا اور عدالت میں ابھی ریفرنس کی 10نقول فراہم کیں۔

اسپیکرسندھ اسمبلی آغاسراج درانی نے پیشی پر غیررسمی گفتگو میں کہا 3 ماہ سےانتظارتھااب جاکرریفرنس فائل ہواہے، حکومت ہےکدھر؟آپ کس حکومت کی بات کررہےہیں؟ اس حکومت کوجیالوں کاعلم نہیں ہے۔

آغاسراج درانی کا کہنا تھا یہ حکومت50 لوگوں کوسنبھال نہیں سکتی، جیالوں نےمارشل لااورآمروں کاسامنا کیاہے، کسی وجہ کےبغیرلاٹھی چارج کرناغلط بات ہے۔

یاد رہے گذشتہ روز سندھ ہائی کورٹ میں آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کے خلاف اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی بھائی مسیح الدین اور دیگر ملزمان کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی تھی۔

نیب حکام نے عدالت کو بتایا کہ آغا سراج کی 35 گاڑیوں اور کروڑوں روپے جائیدادوں کا سراغ لگا لیا گیا ہے، انھوں نے اختیارات کا نباجائز استعمال ، کرپشن اور غیر قانونی بھرتیاں کی ہیں جبکہ دیگر کے خلاف بھی تحقیقات مکمل کرلی گئی ہے۔

تفتیشی افسر نے عدالت کو آگاہ کیا کہ چئیرمین کی منظوری سے آغا سراج درانی کے خلاف کل احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کردیا جائے گا، جس کے بعد عدالت نے آئندہ سماعت پر ریفرنس کی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے نیب نےاسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کوبیس فروری کواسلام آبادکےہوٹل سےحراست میں لیاتھا جبکہ ان کی درخواست ضمانت سندھ ہائی کورٹ میں زیرسماعت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں