The news is by your side.

Advertisement

محکمہ خزانہ سندھ میگا کرپشن کیس، نیب کو اہم شواہد مل گئے

کراچی: قومی احتساب بیورو (نیب ) کو محکمہ خزانہ سندھ میگا کرپشن کیس میں اہم شواہد مل گئے ، ملزم اعجازداوئچ اور فیملی اکاؤنٹ میں 2 ارب روپے پنشن کے منتقل کئے گئے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ خزانہ سندھ میگا کرپشن کیس میں نیب کو اہم شواہد مل گئے، دستاویزات میں بتایا گیا ہے کہ جعلی پنشن کیس کے ملزم اعجازداوئچ سےساڑھے 7کروڑ لیے گئے، گرفتارنیب کے سابق کنسلٹنٹ منور گوپانگ نے رقم لی۔

منورگوپانگ نے رقم ایس وی پی نیشنل بینک عبداللطیف کے ذریعے لی، نیب کراچی نےعبداللطیف کوبھی گرفتارکرلیا، اعجازداوئچ ، فیملی اکاؤنٹ میں 2 ارب روپے پنشن کے منتقل کئے گئے۔

اعجاز کاتعلق دادوسےہے، سندھ کی اہم شخصیت کےمبینہ فرنٹ مین ہیں، جعلی پنشن کیس میں ساڑھے300 اکاؤنٹ میں 4 ارب منتقل کئے گئے۔

جعلی پنشن کیس میں نیب کےبھی 3 افسران کوگرفتارکیاجاچکاہے، نیشنل بینک افسرمنورگوپانگ کوبطوربینکنگ ایکسپرٹ نیب میں تعینات کیاگیاتھا۔

جعلی پنشن اکاؤنٹ کیس میں اب تک 300 سےزائدافراد کےبیانات ریکارڈہوچکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں