The news is by your side.

Advertisement

شریف خاندان کی چوہدری شوگرملز کے بعد شمیم شوگر ملز کی چھان بین شروع

لاہور : قومی احتساب بیورو ( نیب ) نے شریف خاندان کی چوہدری شوگرملز کے بعد شمیم شوگرملز کےاکاؤنٹس کی چھان بین شروع کردی اور کہا شمیم شوگرملز کے اکاؤنٹس سے بھی مشکوک ترسیلات کے شواہد ملے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق شریف خاندان کی چوہدری شوگرملز کے بعد شمیم شوگرملز بھی نیب کےریڈارپرآگئی ، نیب نےشمیم شوگرملزکےاکاؤنٹس سےمبینہ منی لانڈرنگ کی چھان بین شروع کردی۔

نیب ذرائع کا کہنا تھا کہ شمیم شوگرملزکےقرضوں،سرمایہ کاری ودیگرتفصیلات کاریکارڈاکٹھا کیاجارہاہے ، شمیم شوگرملزکےاکاؤنٹس سےبھی مشکوک ترسیلات کےشواہد ملے ہیں۔

ذرائع کے مطابق نیب نے مریم نواز سے بھی شمیم شوگرملز سے متعلق سرمایہ کاری،قرضوں اور دیگر تفصیلات طلب کی گئی اور انھیں 8 اگست کوشمیم شوگر ملز سے متعلق جواب جمع کرانے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں : نیب پیشی پر مریم نواز سے تحقیقات اورسوالات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

یاد رہے 31 جولائی کو چوہدری شوگرملزکیس میں طلبی پر مسلم لیگ ن کی نائب صدر اور سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نیب دفتر میں پیش ہوئیں تھیں ، نیب کی مشترکہ ٹیم نے 45 منٹ تک مریم نواز سے تحقیقات کیں اور سوالنامہ بھی دیا، سوالنامہ میں چوہدری شوگرملزسےمتعلق جواب مانگےگئے ہیں۔

نیب نے مریم نوازکو8 اگست کودوبارہ طلب کرلیا اور ریکارڈبھی ساتھ لانےکی ہدایت کردی تھی۔

بعد ازاں مریم نواز سے تحقیقات اور سوالات کی اندرونی کہانی سامنے آئی تھی ، جس کے مطابق مریم نواز سے چوہدری شوگرملز کے شیئرزہولڈرز ہونے پر معلومات مانگی گئیں ملز کے 4 غیر ملکیوں سے مالی رابطوں پربھی سوالات کئے۔

نیب ذرائع کا کہنا تھا کہ مریم نواز سے شمیم شوگرملزکوسرمایہ کاری سےمتعلق بھی سوالات کئےگئے اور بیرون ملک سےملنےوالی ٹیلی گرافک ٹرانسفرکی معلومات مانگی گئیں جبکہ مختلف افرادسےخریدی گئی زمین سےمتعلق معلومات لی گئیں۔

خیال رہے نیب کی جانب سے منی لانڈرنگ سےمتعلق چوہدری شوگرملزکی تحقیقات کی جارہی ہیں، چوہدری شوگرملزمیں زیادہ سرمایہ کاری2001سے 2007میں ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں