The news is by your side.

Advertisement

شہباز شریف کے گرد احتساب کا شکنجہ مزید سخت

لاہور : قومی احتساب بیورو ( نیب ) نے کروڑوں روپے کنسلٹنٹس کوادا کرنے پرنیب کاشہباز شریف سے تفتیش کا فیصلہ کرتے ہوئے تحقیقات شروع کر دی ہیں ، شہباز شریف نے اپنے دورحکومت اربوں روپے من پسند کنسلٹنٹس کو ادا کئے۔

تفصیلات کے مطابق اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہباز شریف کے گرد احتساب کاشکنجہ مزید سخت ہوگیا ، نیب نے کروڑوں روپے کنسلٹنٹس کوادا کرنے پر شہباز شریف سے تفتیش کا فیصلہ کیا ہے اور 10سال میں منصوبوں کے کنسلٹنٹس کوادا اربوں کی تحقیقات شروع کردیں ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب نے محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ، محکمہ خزانہ اور متعلقہ محکموں سےریکارڈ طلب کر لیا ہے ، 10برس میں اربوں روپے من پسند کنسلٹنٹس کو ادا کیے گئے۔

نیب زرائع کے مطابق سرکاری محکموں میں اہل افرادی قوت کےباوجودالیکشن مہم کرنےوالوں کوکنسلٹنسی سےنوازاگیا، شہبازشریف نےاپنے دورحکومت میں20ارب سے زائد رقم کنسلٹنٹس کو ادا کی۔

مزید پڑھیں : چوہدری شوگر ملز کیس، شہبازشریف 23 اگست کو طلب

جن میں سے 4 کول پلانٹس کے لیے 49 کروڑ80 لاکھ روپے ، خادم پنجاب رورل روڈپروگرام کےلیے12 کروڑ 75 لاکھ اور مری میں کیبل کارزکی تنصیب کی فزیبلٹی اسٹڈی پر20 کروڑ کی ادائیگی شامل ہیں۔

خیال رہے قومی احتساب بیورو نے مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کو چوہدری شوگر ملز کیس میں کل  طلب کیا ہے اور ہدایت کی گئی ہے کہ وہ تمام دستاویزات اور ریکارڈ کے ساتھ تفتیشی ٹیم کے سامنے پیش ہوں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں