The news is by your side.

Advertisement

نیب آئینی ادارہ ہے، احتساب کا نظام قائم کرنا اس کی ذمہ داری ہے: شہبازشریف

لاہور: سابق وزیر اعلیٰ پنجاب اور مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ نیب آئینی ادارہ ہے اور احتساب کا نظام قائم کرنا اس کی ذمہ داری ہے، نیب کی گذشتہ سالوں کی کارکردگی سب کے سامنے ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کیا، شہباز شریف کا کہنا تھا کہ چنیوٹ کے قدرتی وسائل کے ذخائر کا ٹھیکہ بغیر ٹینڈر کے دیا گیا، ڈیل ہوئی اور ساڑھے 4 سو ارب روپے ضائع کر دیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ نندی پور کا 30 ارب کا منصوبہ بھی بغیر ٹینڈر ایک کمپنی کو دیا گیا، نندی پور پاور پروجیکٹ کی مشینری کراچی بندرگاہ پر پڑی خراب ہوگئی۔


گرفتاریوں، نااہلیوں نے الیکشن پر سوالیہ نشان لگادیا، شہباز شریف


شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پارٹی کی طرف سے مجھے وزارت عظمیٰ کے لیے چنا گیا ہے، نوازشریف نے میری بطور وزیراعظم نامزدگی کی توثیق کی تھی، اگر انتخابات جیت گئے تو میں وزیراعظم بنوں گا۔

پوچھے گئے ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ چوہدری نثار، نوازشریف کے سب سے دیرینہ سیاسی رفیق اور دوست رہے، ان کی دوستی کا عینی شاہد ہوں، میرا بھی چوہدری نثار کے ساتھ برادرانہ تعلق تھا، کاش یہ تعلق قائم رہتا۔


کالا باغ ڈیم پر بات کرنا وقت کا زیاں ہے: شہباز شریف


ان کا مزید کہنا تھا کہ تحریک انصاف کا کام الزامات لگانا ہے، عمران خان نے مجھ پر بھی بہت سے الزامات لگائے لیکن آج تک ایک بھی الزام ثابت نہیں کر سکے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں