site
stats
اہم ترین

نیب ترمیمی آرڈیننس جاری، پلی بارگین کا اختیار عدالت کے سپرد

اسلام آباد: صدر مملکت نے نیب ترمیمی آرڈیننس 2017 جاری کردیا، جس کے تحت نیب سے پلی بارگین کا صوابدیدی اختیار واپس لیتے ہوئے یہ اختیار عدالت کے سپرد کردیا گیا۔

نمائندہ اےآر وائی اظہر فاروق کے مطابق نیب ترمیمی آرڈیننس صدر مملکت کی جانب سے جاری کیاگیا ہے، جسے ترمیمی آرڈیننس کا نام دیا گیا ہے، یہ آج رات 12 بجے کے بعد سے لاگو ہوجائے گا۔

ترمیمی آرڈیننس میں پلی بارگین کے حوالے سے اہم فیصلہ کیا گیا ہے، جس کے تحت اب چیئرمین نیب پلی بارگین کا حق استعمال نہیں کرسکتا تاہم اس فیصلے کا اختیار عدالت کے سپرد کردیا گیا ہے۔

صدارتی آرڈیننس میں کہا گیا ہے کہ ’’پلی بارگین کرنے والا شخص تاحیات کسی بھی قسم کے انتخابات میں حصہ لینے کے لیے نااہل ہوگا جبکہ سرکاری ملازم کو پلی بارگین کرنے پر فوری طور پر نوکری سے برطرف کردیا جائے گا‘‘۔

 قبل ازیں آج ہی پریس کانفرنس کرتے ہوئے اسحق ڈار نے بیان دیا تھا کہ نیب کا ترمیمی آرڈیننس آج ہی جاری ہوجائے گا جس میں پلی بارگین کرنے والے کو کسی بھی عوامی عہدے اور سرکاری ملازمت کے لیے نااہل قرار دیا جائےگا۔

یہ پڑھیں: کرپشن کے مرتکب ملزم  کو عمر بھر کیلئے نااہل قرار دیا جائے گا، اسحق ڈار

نیب نے سیکریٹری خزانہ بلوچستان مشتاق رئیسانی سے کرڑوں روپے کی پلی بارگین کی تھی جس پر اسے تنقید کیا نشانہ بنایا گیا، سپریم کورٹ نے نوٹس لیتے ہوئے اس عمل کو غیر آئینی قرار دیا تھا۔

مشتاق رئیسانی سے پلی بارگین کرکے 65 کروڑ 32 لاکھ روپے واپس  لیے، نیب

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top