The news is by your side.

Advertisement

نیب نے حمزہ شہباز کے الزامات مسترد کر دیے، حمزہ کو بھیجا گیا نوٹس بھی منظر عام پر آگیا

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) نے لیگی رہنما حمزہ شہباز کے تمام الزامات مسترد کر دیے، ترجمان نیب نے کہا کہ حمزہ شہباز کے الزامات کی تردید اور مذمت کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان نیب نے کہا کہ ڈی جی نیب لاہور نے اپنی ڈگری سے متعلق کبھی حمزہ شہباز سے بات نہیں کی، حمزہ شہباز کے تمام الزامات من گھڑت ہیں۔

انھوں نے کہا کہ حمزہ شہباز کے الزامات کھسیانی بلی کھمبا نوچے کے مترادف ہے، حمزہ اور فیملی ممبران کے خلاف منی لانڈرنگ کے ٹھوس ثبوت ملے ہیں، نیب پر حکومت کا کوئی دباؤ نہیں، نیب خود مختار ادارہ ہے۔

نیب کے ترجمان کا کہنا تھا کہ شریف فیملی کے اکاؤنٹس میں رقم مبینہ منی لانڈرنگ سے منتقل ہوئی، اس حوالے سے اسٹیٹ بینک نے شکایت کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  حمزہ شہباز نیب پر برس پڑے، میری بہنوں اور بیمار والدہ کو بھی نوٹس بھیج دیا

دوسری طرف نیب کا حمزہ شہباز کو بھجوایا گیا نوٹس بھی منظر عام پر آ گیا ہے، نیب نے حمزہ کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں 16 تاریخ کو طلب کر رکھا ہے۔

حمزہ شہباز سے مجموعی طور پر 8 سوالات پوچھے گئے، مراسلے میں کہا گیا کہ والدہ کی جانب سے وصول ہونے والی فارن کرنسی کا ریکارڈ پیش کریں، سالانہ بنیادوں پر کی جانے والی انویسٹمنٹ کا ریکارڈ بھی پیش کریں۔

نوٹس مراسلے میں حمزہ شہباز سے کہا گیا ہے کہ 2006 سے 2008 تک ٹیکس ریٹرن نہ جمع کرانے کا ریکارڈ پیش کریں، اور 2005 سے 2017 کے دوران اثاثوں میں کئی گنا اضافے پر بھی تفصیلات پیش کریں۔

نوٹس کے مطابق حمزہ شہباز سے نیب کی جانب سے 2005 سے اب تک ملنے والے تحائف کی تفصیلات بھی طلب کی گئی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں