The news is by your side.

Advertisement

میاں منشا کا کاروباری گروپ پاکستان میں 300 ارب روپے سے زائد اثاثوں کا مالک، نیب رپورٹ

لاہور: قومی احتساب بیورو نے میاں منشا کی طلبی سے متعالق ہائی کورٹ میں رپورٹ جمع کرادی جس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ اُن کا گروپ تین سو ارب روپے سے زائد اثاثے رکھتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نیب نے میاں منشا کی طلبی سے متعلق لاہورہائی کورٹ میں رپورٹ جمع کرادی، جس میں بتایا گیا ہے کہ نشاط گروپ صرف پاکستان میں تین سو ارب روپے سے زائد کے اثاثوں کا مالک ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ میاں منشا کے گروپ نے 2010 میں لندن کا سینٹ جیمز ہوٹل اینڈ کلب 60 ملین پاؤنڈ میں خریدا، خریداری کی رقم منتقل کرنے کے شواہد موجود نہیں ہے۔

مزید پڑھیں: منی لانڈرنگ کیس:معروف صنعت کارمیاں منشا نیب میں پیش

نیب نے رپورٹ میں یہ بھی انکشاف کیا کہ اربوں روپے کی برطانیہ منتقلی کسی بینکنگ چینل کے ذریعے ٹرانسفر نہیں کی گئی کیونکہ گروپ کے سی ای او عمر، حسن اور ایمل منشا نے ٹیکس گوشواروں میں یہ رقم ظاہر نہیں کی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رقم کی غیر قانونی طریقے سے منتقلی فارن ایکس چینج ایخٹ سمیت دیگر قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے، چیئرمین نیب نے انسداد منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت ہی ملزمان کے خلاف تحقیقات کا حکم دیا۔ نیب نے لاہور ہائی کورٹ کو یہ بھی آگاہ کیا کہ میاں منشا کے صاحبزادوں نے منی ٹریل مانگی جارہی ہے مگر وہ فراہم کرنے میں ناکام ہیں۔

نیب نے لاہور ہائی کورٹ سے استدعا کی کہ درخواست کو ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کیا جائے۔ عدالت نے نیب رپورٹ کی روشنی میں میاں منشا اور اُن کے بچوں کو لندن کا ہوٹل خریدنے کی منی ٹریل پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

یہ بھی پڑھیں: کاروباری شخصیت میاں منشاء کی گرفتاری سے بچنے کی درخواست مسترد

یاد رہے کہ میاں منشا کےخلاف اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی، جس میں  نشاط گروپ کےخلاف انکوائری کی استدعا کی گئی تھی، میاں منشا قانونی بنیاد فراہم کرنےمیں ناکام رہے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں