The news is by your side.

Advertisement

نیب نے آصف زرداری کو 29 مئی کو طلب کر لیا

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو (نیب) نے پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کو تفتیش کے لیے دوبارہ طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق نیب نے سابق صدر آصف علی زرداری کو 29 مئی کو نیب اولڈ ہیڈ کوارٹرز میں پیش ہونے کی ہدایت کر دی ہے۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کو پاور پراجیکٹس،غیر قانونی ٹھیکوں کے کیس میں طلب کیا گیا۔

آصف زرداری کا بیان نیب کی کمبائنڈ انوسٹی گیش ٹیم ریکارڈ کرے گی، 23 مئی کو نیب طلبی پر آصف زرداری نے عدم پیشی کی درخواست بھجوائی تھی۔

خیال رہے کہ نیب نے بلاول بھٹو زرداری کو بھی 29 مئی کو طلب کر رکھا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  جعلی اکاؤنٹس کیسز میں تحقیقات، آصف زرداری نے نیب میں بیان ریکارڈ کرادیا

یاد رہے کہ سابق صدر آصف زرداری نے 16 مئی کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں 8 ارب روپے کی مشکوک ٹرانزیکشن اور اوپل 225 میں ایک ارب روپے رشوت لینے کے الزام پر نیب اولڈ ہیڈ کوارٹرز میں پیش ہو کر بیان ریکارڈ کرایا تھا۔

آصف زرداری سے آٹھ ارب روپے کی مشکوک ٹرانزیکشن اور زرداری گروپ پر اوپل ٹوٹو فائیو مشترکہ منصوبے میں ایک ارب روپے رشوت لینے پر ڈیڑھ گھنٹہ تک تفتیش کی گئی تھی۔

عدالت اوپل 225 انکوائری اور پارک لین کیس میں آصف زرداری کی 12 جون تک عبوری ضمانت، توشہ خانہ ویکل انکوائری میں سابق صدر کی 20 جون تک عبوری ضمانت میں توسیع کر چکی ہے، جب کہ ہریش کمپنی کیس میں ان کی ضمانت میں 13 جون تک توسیع کی جا چکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں