The news is by your side.

Advertisement

جعلی اکاؤنٹس کیس،آصف زرداری کی نیب پیشی کی اندرونی کہانی

اسلام آباد: جعلی اکاؤنٹس( مشکوک ٹرانزیکشنز) سمیت دو کیسز کی تحقیقات کے لیے نیب نے پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زدراری کو مرکزی دفتر طلب کیا تھا۔

ذرائع کے مطابق آصف زرداری کی نیب پیشی کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔ پی پی کے شریک چیئرمین نے تحقیقاتی ٹیم کو جواب دیا کہ ’’آج نیب کوآخری مرتبہ دستیاب ہوں، آئندہ پیش نہیں ہوں گا‘‘۔

آصف زرداری نے کہا تحقیقاتی ٹیم سے غصے میں کہا کہ ’’اب نیب نہیں ہوگی، یا تو نیب رہے گا یا پھر پاکستان کی معیشت،  ہرایک کےپاس بلیک منی اوربزنس اکاؤنٹس ہیں‘‘۔

نیب کی تحقیقاتی ٹیم نے جعلی اکاؤنٹس سے متعلق آصف زرداری سے سوال کیا تو انہوں نے مشکوک اکاؤنٹس اور ٹرانزیکشنز کو برنس اکاؤنٹ کہا، تحقیقاتی ٹیم کے سوال دہرانے پر آصف زداری غصے میں آگئے تھے۔

مزید پڑھیں: جعلی اکاؤنٹس کیسز میں تحقیقات، آصف زرداری نے نیب میں بیان ریکارڈ کرادیا

نیب کے مطابق آصف زرداری کو3انکوائریزمیں سوالنامہ دیاگیا، انہیں 23 مئی کو جوابات کے ساتھ دوبارہ طلب کیا گیا ہے،  تین ریفرنسز کی تحقیقات کا جواب عدالت میں 26 مئی تک جمع کرایا جائے گا۔

یاد رہے کہ آصف زرداری آج نیب کی طلبی پر تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے تھے جہاں اُن سے ڈیڑھ گھنٹے تک تفتیش کی گئی۔ سابق صدر نے اپنا بیان ریکارڈ کرادیا اور روانہ ہوگئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں