The news is by your side.

Advertisement

انتخابات 2018 کو کوئی سنجیدہ خطرہ نہیں، انتخابات 25 جولائی کو ہی ہوں گے، نیکٹا حکام

اسلام آباد : نیکٹا حکام کا کہنا ہے کہ انتخابات دوہزاراٹھارہ کو کوئی سنجیدہ خطرہ نہیں، آئندہ انتخابات پچیس جولائی کو ہی ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق نیشنل کاؤنٹرٹیرارزم اتھارٹی کے حکام نے عام انتخابات 2018 میں سیکیورٹی سے متعلق امور پر الیکشن کمیشن کو بریفنگ دیتے ایک بار پھرانتخابات پچیس جولائی کو ہی کرانے کی یقین دہانی کرادی۔

نیکٹا نیشنل کوآرڈینیٹر ڈاکٹر سلمان خان نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انتخابات کو کوئی سنجیدہ خطرہ نہیں، انتخابات پچیس جولائی کو ہی ہوں گے، امیدواروں کی حفاظت کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے جارہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ انتخابات کا پُرامن انعقاد یقینی بنانے کے لیے کوششیں کی جائیں گی، سیکورٹی خدشات سے متعلق الرٹس باقاعدہ صوبائی حکومتوں کو بھجوائے جارہے ہیں۔

اس موقع پر کتنے امیدواروں اورسیاسی رہنماوں کو خطرات لاحق ہیں، نیکٹا نےجواب دینے سے گریز کیا۔

دوسری جانب چیف الیکشن کمیشنر سردار محمد رضا خان نے بلوچستان اور خیبر پختونخواہ میں دہشت گرد حملوں کی مذمت کی اور نگراں حکومت کو  امیدواروں کی سیکیورٹی اور    انتخابات کا پُرامن انعقاد یقینی بنانےکی ہدایت کی ہے۔

واضح رہے کہ انتخابی سرگرمیوں کے دوران ایک ہفتے میں 4 دہشت گرد حملے ہوچکے ہیں جن میں ہارون بلور اور سراج رئیسانی سمیت 150 سے زائد افراد جاں بحق اور 130 سے زائد زخمی ہوئے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں