The news is by your side.

Advertisement

نادرا کے دو سابق افسران حساس ریکارڈ چوری کرکے لے گئے، مقدمہ درج

اسلام آباد : نادرا کا حساس ریکارڈ چوری ہو نے کا انکشاف ہوا ہے، دو سابق افسران ملازمت سے فارغ ہونے پر ڈیٹا بھی اپنے ساتھ لے گئے، ریکارڈ کے غلط استعمال کے خدشہ کے باعث مقدمہ درج کرادیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن2018بہت قریب ہیں اور اسی دوران نادرا کا حساس ریکارڈ چوری ہوگیا، اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ واردات میں دو سابق افسران ملوث ہیں، جن کیخلاف ایف آئی آر درج کروادی گئی ہے ۔

ڈیٹا غائب ہونے سے ادارے کو ریکارڈ کے غلط استعمال کا خدشہ ہے، نادرا حکام نے ریٹائر ہونے والے سابق ڈپٹی چیئرمین نادرا سید مظفرعلی شاہ اور ڈپٹی ڈائریکٹر شہزاد کمال کے خلاف مقامی تھا نے میں مقدمہ درج کروا دیا ہے۔

ایف آئی آر میں بتایا گیا ہے کہ مظفر شاہ نادرا کی ملازمت سے فارغ کیے جانے پر حساس ریکارڈ اپنے ساتھ لے گئے ہیں، ڈپٹی ڈائریکٹر بھی ادارے کا لیپ ٹاپ ،فلیش ڈرائیو اور ورک اسٹیشن چوری کرکے لے گئے ہیں، ایف آئی آر میں افسروں سے حساس ریکارڈ برآمد کرانے کیلئے کہا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل ہی تحریک انصاف کی جانب سے  خط لکھ کر چیئرمین نادرا کی برطرفی کا مطالبہ کیا  گیاتھا، پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ ڈیٹا چوری کر کے نون لیگ کو دیا گیا ہے جو انتخابات میں استعمال ہوسکتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں